میری بھاگ دوڑ کے دن ختم ہو گئے: شعیب اختر

راولپنڈی ایکسپریس کا کہنا ہے کہ آسٹریلیا میں گھٹنے کی تبدیلی کے بعد شائد وہ چل نہیں پائیں گے۔

پاکستان کے سابق فاسٹ باؤلر شعیب اختر ، جنہیں راولپنڈی ایکسپریس بھی کہا جاتا ہے، اپنے گھٹنے کی مکمل تبدیلی کے بعد دوڑ نہیں پائیں گے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے قومی کرکٹ ٹیم کے سابق فاسٹ باؤلر شعیب اختر نے کہا ہے کہ "میرے بھاگنے کے دن ختم ہو گئے ہیں اور بہت جلد آسٹریلیا میلبورن میں گھٹنے کی تبدیلی کے لیے جا رہا ہوں۔”

یہ بھی پڑھیے

دوسرا ٹی 20 میچ:پاکستان نے بنگلادیش کو 8 وکٹوں سے شکست دے دی

پہلا ٹی ٹوئنٹی میچ:شاہینوں نے ٹائیگرز کو چاروں شانے چت کردیا

راولپنڈی ایکسپریس نے سوشل میڈیا پر خبر کے ساتھ اپنی تصویر بھی شیئر کی ہے۔

ان کے چاہنے والوں اور مداحوں نے پوسٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے ان کی جلد صحت یابی کے لیے دعا کی۔ مداحوں نے ان کی سرجری کے لیے نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا۔

ان کے مداحوں میں سے ایک لکھا ہے کہ "ان گھٹنوں نے کمال کیے ہیں! اللہ آپ کو جلد صحت یاب کرے۔”

واضح رہے کہ اسپیڈ اسٹار کے پاس 161.3 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے تیز ترین گیند پھینکنے کا عالمی ریکارڈ ہے۔

شعیب اختر آسٹریلیا کے بریٹ لی کے ساتھ کرکٹ کی تاریخ کے تیز ترین گیند بازوں میں شمار کیے جاتے ہیں۔

Facebook Comments Box