عام چور اور سیاسی چور میں کیا فرق ہے؟

سیانے لوگ کہتے ہیں کہ عام چور آپ کا پیسہ، آپ کا بیگ، آپ کی گھڑی اور آپ کے زیورات چراتا ہے لیکن سیاسی چور آپ کا مستقبل، آپ کا کیریئر، آپ کی تعلیم، آپ کی صحت اور آپ کا کاروبار چراتا ہے۔

طرفہ تماشہ یہ ہے کہ عام چور آپ کو لوٹ کے لیے آپ کا انتخاب کرتا ہے لیکن آپ وہ ہیں جو اپنے آپ کو لٹوانے کے لیے سیاسی چور کا انتخاب کرتے ہیں۔ ہم انہیں منتخب کرتے ہیں، ہم انہیں ووٹ دیتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

کراچی چڑیا گھر انتظامیہ کی جانوروں کو بھوکے مارنے کی تیاری

ٹیلی نار پاکستان میں مزید کمپنیز کیساتھ انضمام کیلیے کوشاں

ہم آنکھیں بند کرکے کہتے ہیں کہ ہم اندھے نہیں ہیں۔ کون کس کو دھوکہ دے رہا ہے؟ اس سارے معاملے کا مضحکہ خیز حصہ یہ ہے کہ ہم اپنے سامان کو عام چور سے بچانے کے لیے لڑیں گے۔ لیکن ہم سیاسی چوری کے دفاع اور تحفظ کے لیے ایک دوسرے سے لڑتے ہیں۔

سوال یہ ہے کیا ہم ایسا نہیں کرتے؟

ٹھیک ہم ان لوگوں کی حفاظت کے لئے ایک دوسرے کے ساتھ لڑ رہے ہیں جو ہمارے کیریئر کو چوری کر رہے ہیں، ہماری خوشیوں کو چوری کر رہے ہیں، ہماری صحت کو چوری کر رہے ہیں، ہماری کامیابیاں چرا رہے ہیں۔ کیا شرم کی بات. کیسا دھوکا ہے۔ یہ چیز ہمیں گہرائی میں سوچنے کا مطالبہ کرتی ہیں۔ آپ بہت دیر سے تماشائی بن گئے ہیں۔ آپ کو ہل پر ہاتھ ڈالنے اور اس عمل کا حصہ بننے کے لیے تیار ہونا چاہیے۔

اگر آپ کو معاشرے میں اصل تبدیلی لانا ہے تو آپ کو وہاں پر خود یلغار کرنا ہوگی ، آپ کو وہاں ہونا چاہیے جہاں فیصلے کیے جا رہے ہیں۔ اگر ہم اپنی تعداد میں موجود ہیں تو وہ ہماری تعداد سے بڑھ نہیں سکتے۔

لیکن آپ اسے یہ کہہ کر الگ ہو جاتے ہیں کہ "اوہ یہ ایک گندا کھیل ہے” اور پھر اور گندے لوگوں کو اس میں کھیل میں شامل ہونے کا موقع مل جاتا ہے ۔ اور جب وہ فیصلے کرنے لگیں گے تو آپ کو پتہ چل جائے گا کہ یہ گندا کھیل ہے یا نہیں۔

اس سیاسی کھیل کا نتیجہ ہمیشہ گندا ہوتا ہے جس کا سیدھا اثر آپ کے مستقبل ، آپ کے کیریئر ، آپ کی صحت ، آپ کے کاروبار ، آپ کی کامیابی اور آپ کی تعلیم پر پڑتا ہے۔

مجھے امید ہے کہ میرے لکھے ہوئے الفاظ آپ کے اندر کچھ نہ کچھ ہلچل ضرور مچائیں گے کیا میں صحیح کہہ رہا ہوں؟

Facebook Comments Box