آئی ایم ایف مشن چیف کی پالیسی سطح کے مذاکرات میں نمایاں پیش رفت کی تصدیق

آئی ایم ایف نے پاکستان کے ساتھ نویں اقتصادی جائزہ مذاکرات کا اعلامیہ جاری کر دیا۔وزیراعظم پاکستان کے پالیسیز پر عمل درآمد کے عزم کا خیر مقدم، مالی استحکام کیلئے مستقل ریونیو اقدامات اور سبسڈیز میں کمی ترجیحات قرار، ورچوئل مذاکرات جاری رکھنے پر اتفاق

آئی ایم ایف نے پاکستان کے ساتھ نویں اقتصادی جائزہ مذاکرات کا اعلامیہ جاری کر دیا۔ آئی ایم ایف مشن چیف نے پالیسی سطح کے مذاکرات میں نمایاں پیش رفت کی تصدیق کردی۔

آئی ایم ایف نے وزیراعظم پاکستان کی جانب سے پالیسیز پر عمل درآمد کے عزم کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ میکرو اکنامک استحکام کیلیے ان پالیسیز پر عملدرآمد کی ضرورت ہے۔

یہ بھی پڑھیے

پاکستان اور آئی ایم ایف کے مذاکرات ختم، معاہدہ نہ ہوسکا، ڈومور کا مطالبہ برقرار

کراچی پورٹ پر پھنسے ساڑھے پانچ ہزار سے زائد کنٹینرز کلیئر نہیں ہوسکے

اعلامیے کے مطابق آئی ایم ایف مشن چیف نے کہا ہے کہ تعمیری بات چیت پر پاکستانی حکام کے شکر گزار ہیں۔ آئی ایم ایف نے مالی استحکام کیلئے مستقل ریونیو اقدامات اور سبسڈیز میں کمی کو ترجیحات قراردیا ہے۔

آئی ایم ایف کا کہنا ہے کہ مقامی اور بیرونی عدم توازن دور کرنے کیلئے اقدامات پر بات چیت ہوئی، پاکستان کے ساتھ ورچوئل مذاکرات جاری رہیں گے ،ان پالیسیوں پر عمل درآمد کیلئے تفصیلات کو حتمی شکل دی جائے گی۔

آئی ایم ایف کا کہنا ہے کہ دورے میں مستقل طور پر ریونیو حاصل کرنے کے اقدامات پر بات چیت ہوئی ، نان ٹارگٹڈ سبسڈی میں کمی پربھی بات چیت ہوئی، سیلاب متاثرین کی مدد کرنے پر بھی بات چیت ہوئی۔

آئی ایم ایف کا کہنا ہے کہ غریب ترین طبقے کے سماجی تحفظ بڑھانے کے لئے بات چیت ہوئی، گردشی قرض میں کمی کر کے توانائی  کے شعبے میں عملداری یقینی بنانے پر بات چیت کی گئی، توانائی کی فراہمی بہتر کرنے پر بات چیت ہوئی۔

متعلقہ تحاریر