عدلیہ کو قابو کرنے میں کوشاں حکومت مہنگائی کو قابو کرنے میں ناکام

ملک میں ہفتہ وار مہنگائی 0.6 فیصد کی معمولی شرح سے کمی کے بعد 46.31فیصد رہی، آلو، انڈے، مرغی، گائے کا گوشت، دال مسور، دودھ، دہی، چاول چینی اور گھی کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈ

اعلیٰ عدلیہ کو قابو کرنے میں مستعدی دکھانے والی پی ڈی ایم حکومت مہنگائی کو قابو کرنے میں  سستی کاشکار ہوگئی۔

ملک میں ہفتہ وار مہنگائی کی شرح میں 0.6فیصد کی معمولی کمی سے46.31  فیصد کی سطح تک ریکارڈ کی گئی۔

یہ بھی پڑھیے

وفاق کا عید سے قبل اہلیان کراچی کو تحفہ، بجلی 58 پیسے فی یونٹ مہنگی

اتحادی حکومت کے ایک سال میں پاکستانی کرنسی سری لنکن کرنسی سے نیچے، رپورٹ

ادارہ شماریات نے ہفتہ وار مہنگائی کی رپورٹ جاری کردی ہے۔  ایک ہفتے میں 26 اشیا کی قیمتوں میں اضافہ ہوا۔  ادارہ شماریات کے مطابق  ایک ہفتے میں آلو 5روپے28 پیسے فی کلو، ایل پی جی کا گھریلو سلنڈر 141 روپے 61 پیسے ،  انڈے 6 روپے 89 پیسے فی درجن اور مرغی کا گوشت  8 روپے 29 پیسے فی کلو مہنگاہوا۔

ادارہ شماریات کے مطابق ایک ہفتے میں کیلے 4 روپے فی درجن، دال ماش 6 روپے 12 پیسے ،گائے کا گوشت  5 روپے 76 پیسے اور  بکرے کا گوشت  9 روپے 95 پیسے فی کلو مزید مہنگاہوا   جبکہ   دال مسور،دہی ، دودھ، چاول، چینی اور گھی کی قیمتوںمیں بھی اضافہ ہوا ہے۔

ادارہ شماریات نے دعویٰ کیا ہے کہ     ایک ہفتے میں 9 اشیا کی قیمتوں میں کمی ہوئی ،  ٹماٹر 17روپے 14 پیسے اور پیاز 15 روپے 37 پیسے فی کلو جبکہ آٹے کا تھیلا 74 روپے 70پیسے سستا ہوا، اسی طرح  لہسن، دال چنا، دال ماش کی قیمتوں میں بھی کمی ہوئی۔  ادارہ شماریات کے مطابق  ایک ہفتے میں 16 اشیاکی قیمتوں میں کوئی ردوبدل نہیں ہوا ۔

متعلقہ تحاریر