بینکنگ محتسب نے مالی سال 2023 کی دوسری ششماہی میں 12015 شکایات کا ازالہ کیا

بینکنگ محتسب پاکستان نے شکایات کا ازالہ کر کے بینک صارفین کو 539.72 ملین روپے کا مالیاتی ریلیف فراہم کیا۔

بینکنگ محتسب نے سال 2023 کی دوسری ششماہی کے دوران بینک صارفین کو 539.72 ملین روپے کا ریلیف فراہم کیا۔

تفصیلات کے مطابق بینکنگ محتسب پاکستان نے کیلنڈر سال 2023 کی دوسری ششماہی (جنوری سے جون) کے دوران بارہ ہزار سے زائد (12،015) شکایات کا ازالہ کر کے بینک صارفین کو 539.72 ملین روپے کا مالیاتی ریلیف فراہم کیا۔

بینکنگ محتسب کی جانب سے تقریباً 98 فیصد (11،731) شکایات کو خوش اسلوبی سے حل کیا گیا۔ صرف 2 فیصد (284) شکایات کو بینکنگ محتسب کے رسمی احکامات کے ذریعے حل کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیے

پاکستان کو آئی ایم ایف سے 1.2 بلین ڈالر کی پہلی قسط موصول ہوگئی، اسحاق ڈار

آئی ایم ایف نے گذشتہ مالی سال کے دوران پاکستان کی شرح نمو کو منفی 0.5 قرار دے دیا

بینکنگ محتسب کے پاس کمرشل بینکوں کے خلاف درج ہونے والی شکایات کی تعداد میں کوئی واضح کمی دیکھنے میں نہیں آئی ہے کیونکہ یکم جنوری سے 30 جون ، 2023 تک تقریباً پندرہ ہزار (14،863) نئی شکایات موصول ہوئی ہیں، جن میں پرائم منسٹر پورٹل کی 4،057 شکایات بھی شامل ہیں۔

بینک صارفین کو کسی بھی دھوکہ دہی اور جعلسازی سے بچانے کے لیے ،  بینکنگ محتسب پاکستان ، جناب محمد کامران شہزاد نے بینک صارفین پر زور دیا ہے کہ وہ اپنی ذاتی اور مالی معلومات کس بھی غیرمتعلقہ شخص پر ظاہر نہ کریں۔

انہوں نے مزید کہا کہ مشکوک کالز کے موصول ہونے کی صورت میں انہیں فوری طور پر اپنے بینک کی قریبی برانچ یا بینک کی ہیلپ لائن پر رابطہ کرنا چاہیے۔ تاکہ کال کرنے والے خلاف بروقت کارروائی عمل میں لائی جاسکے۔

متعلقہ تحاریر