لاہور میں آٹے کے 20 کلو تھیلے کی قیمت میں 50 روپے اضافہ کردیا گیا

فلور ملز ایسوسی ایشن نے حالیہ قیمتوں میں اضافے کا ذمہ دار وزارت خوراک کو ٹھہرایا ہے۔

مصیبت زدہ عوام کو ایک اور جھٹکا دیتے ہوئے لاہور میں فلور مل مالکان نے آٹے کی قیمت میں اچانک 50 روپے اضافے کا اعلان کیا ہے جس سے 20 کلو کے تھیلے کی قیمت 2850 روپے ہو گئی ہے۔

فلور ملز ایسوسی ایشن کے چیئرمین عاصم رضا نے اوپن مارکیٹ میں گندم کی قیمت میں اضافے کا حوالہ دیتے ہوئے قیمتوں میں اضافے کا جواز پیش کیا جو کہ 4800 روپے فی من تک پہنچ گئی ہے۔

عاصم رضا نے وضاحت دیتے ہوئے کہا ہے کہ گندم کی قیمتوں میں اضافے نے ایسوسی ایشن کو اس کے مطابق آٹے کی قیمت کو ایڈجسٹ کرنے پر مجبور کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

وفاقی حکومت کا بجلی صارفین پر مزید 500 ارب روپے کا بوجھ ڈالنے کا فیصلہ

غریب جائے تو جائے کہاں؟ ملک بھر میں مہنگائی کی شرح 29 فیصد تک پہنچ گئی

فلور ملز ایسوسی ایشن کے چیئرمین نے مزید کہا کہ مارکیٹ کی موجودہ صورتحال کے باعث 40 کلو گرام گندم کی قیمت میں نمایاں اضافہ ہوا ہے جو کہ اب 4725 روپے ہو گئی ہے۔

انہوں نے حالیہ اضافے کے لیے وزارت خوراک کو بھی ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ وزارت خوراک نے 200 من سے زیادہ گندم ذخیرہ کرنے پر پابندی عائد کررکھی ہے جس کی وجہ سے مارکیٹ میں آٹے کی قلت پیدا ہوگئی ہے ، اور اس کے نتیجے میں قیمتوں میں اضافے ہورہا ہے۔

فلور ملز ایسوسی ایشن کے چیئرمین عاصم رضا کے دعوے کو مسترد کرتے ہوئے سیکرٹری خوراک زمان وٹو نے کہا ہے کہ لاہور میں آٹے کی قیمت میں اضافے کے کسی بھی جواز کو قبول نہیں کیا جائےگا۔

سیکرٹری خوراک زمان وٹو نے اس یقین کا اظہار کیا کہ بعض مخصوص مفادات جان بوجھ کر اپنے فائدے کے لیے مارکیٹ میں ہیرا پھیری کر رہے ہیں، جس کے نتیجے میں عوام کو آٹے کی قیمتوں میں اضافے کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

متعلقہ تحاریر