پاکستانی برآمدات آسمان سے باتیں کرنے لگیں

مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد نے کرونا وباء کے باوجود برآمدات میں اضافے پر مینوفیکچررز کی کارکردگی کو سراہا ہے۔

وزیراعظم پاکستان عمران خان کے مشیر برائے تجارت و سرمایہ کاری عبدالرزاق داؤد نے کہا ہے کہ حکومت کی بہترین حکمت عملی کے سبب پاکستانی برآمدات میں زبردست اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔  

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام شیئر کرتے ہوئے مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد کا کہنا ہے کہ ہماری برآمدات نے بڑی منڈیوں میں خاطرخواہ کامیابیاں سمیٹی ہیں۔ مالی سال 2020-21 کے دوران چین کو برآمدات کی مالیت 1.74 ارب ڈالرز رہی جو گزشتہ مالی سال کے دوران 586 لاکھ ڈالرز تھی۔ اسی عرصے کے دوران جرمنی کو کی جانے والی برآمدات 19 فیصد اضافے سے 1.5 ارب ڈالرز رہی ہیں۔

مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد کا کہنا ہے کہ مالی سال 2020-21 کے دوران نیدرلینڈ کی برآمدات 23 فیصد اضافے سے 1.2 ارب ڈالرز تک پہنچ گئی جبکہ گزشتہ مالی سال کے دوران اس کا حجم 1 ارب ڈالرز تھا۔

یہ بھی پڑھیے

قومی بچت اسکیمز کے منافع پر ود ہولڈنگ ٹیکس میں اضافہ

مالی سال 2020-21 کے اختتام پر پولینڈ کو کی جانے والی برآمدات 28 فیصد اضافے سے 3 کروڑ 8 لاکھ ڈالرز تک پہنچ گئی ہیں جبکہ مالی سال 2019-20 ان برآمدات کا کل حجم 2 کروڑ 41 لاکھ ڈالرز تھا۔ مشیر تجارت کا کہنا ہے کہ مالی سال 2020-21 میں امریکی برآمدات میں 39 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

مشیر تجارت کے مطابق مالی سال 2020-21 میں امریکا کو پانچ ارب 20 کروڑ ڈالرز کی برآمدات ہوئیں جو مالی سال 2019-20 کے مقابلے میں 1 ارب 45 کروڑ روپے زیادہ ہیں۔ اعدادوشمار کے مطابق مالی سال 2019-20 میں امریکی برآمدات کا حجم 3 ارب 70 کروڑ ڈالرز تھا۔

عبدالرزاق داؤد نے برآمدات میں اضافہ کے لیے نیویارک اور ہیوسٹن کے پاکستانی سفارتخانوں میں تعینات ٹریڈ و انویسٹمنٹ افسران کو برآمدکنندگان کو تمام سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی۔

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں وزارت خزانہ نے ملکی معیشت پر ماہانہ اپ ڈیٹ آﺅٹ لک رپورٹ جاری کی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ معاشی بحالی اور سرگرمیوں میں تیزی کا سلسلہ برقرار ہے۔

متعلقہ تحاریر