ٹویوٹا کمپنی پاکستان میں 100 ملین ڈالرز کی سرمایہ کاری کرے گی

انڈس موٹر کمپنی کے سی ای او کے مطابق سرمایہ کاری کا مقصد ماحول دوست گاڑیاں بنانا ہے۔

ٹویوٹا کمپنی پاکستان میں ہائبرڈ الیکٹرک وہیکل (ایچ ای وی) کی مقامی پیداوار کے لیے 100 ملین امریکی ڈالرز سے زائد کی سرمایہ کاری کرے گی۔

اعلان کردہ سرمایہ کاری پورٹ قاسم ، کراچی میں واقع انڈس موٹر کمپنی لمیٹڈ (آئی ایم سی) پلانٹ میں تیار ہونے والی پہلی ہائبرڈ الیکٹرک وہیکل کے اجزاء کے لوکلائزیشن ، پلانٹ کی توسیع اور پیداوار پر خرچ کی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیے

چھ کمپنیوں کے گردشی قرضوں کا حجم 1557 ارب روپے تک پہنچ گیا

انڈس موٹر کمپنی کے وائس چیئرمین مسٹر شنجی یانگی اور چیف ایگزیکٹو جناب علی اصغر جمالی کی قیادت میں ایک وفد نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی۔

میٹنگ میں ٹویوٹا کمپنی ایشیا کے سی ای او یوچی میزاکی نے ویڈیو پیغام کے ذریعے شرکت کی۔ میٹنگ میں وفاقی وزیر صنعت و پیداوار خسرو بختیار ، وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر اور وزیر خزانہ شوکت ترین نے بھی شرکت کی۔ پاکستان میں جاپان کے سفیر کونینوری مٹسوڈا نے بھی اس موقع پر شرکت کی۔

اس موقع پر ٹویوٹا ایشیا کے سی ای او یوچی میزاکی کا کہنا تھا کہ “ہم پاکستان میں اپنے صارفین کے لیے ٹویوٹا کی جدید جنریشن ہائبرڈ الیکٹرک ٹیکنالوجی لانے کے لیے اس نئی سرمایہ کاری کا اعلان کرتے ہوئے پرجوش ہیں۔ یہ سرمایہ کاری پاکستان کے ساتھ ہماری مضبوط وابستگی اور حکومت پر اعتماد کا ثبوت ہے۔ ہم حکومت پاکستان کی ماحولیات کے حوالے سے کی جانے والی کوششوں کو سراہتے ہیں۔ نئی ٹیکنالوجی سے ماحول گاڑیاں بنانے میں مدد ملے گی۔

انہوں نے کہا کہ ہائبرڈ الیکٹرک گاڑیاں کی بڑے پیمانے پر پیداوار سے جلد CO2 کے اخراج پر قابو پایا جائے گا۔ یہ پروگرام وزیراعظم کے کلین اینڈ گرین وژن کے بہت قریب ہے۔

وزیر اعظم عمران خان نے ٹویوٹا کی سرمایہ کاری کے اعلان کو سراہتے ہوئے کہا کہ “ٹویوٹا اور جاپان انتہائی آزمائش کے وقت میں بھی پاکستان کے لیے سب سے پرعزم شراکت دار رہے ہیں۔ انہوں نے کہا ہم ٹویوٹا کی جانب سے پاکستان پر اعتماد کے اظہار کی قدر کرتے ہیں، اور ماحول دوست ہائبرڈ الیکٹرک گاڑیوں کے لیے اس نئی سرمایہ کاری کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ انڈس موٹر کمپنی کی پاکستان میں شاندار کامیابی دوسری کمپنیوں کے لیے ایک مثال ہے۔

پاکستان میں جاپان کے سفیر کونینوری مٹسوڈا نے اس فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا “جاپان کا سفارت خانہ پراعتماد ہے کہ سرمایہ کاری کا نیا فیصلہ جاپان اور پاکستان کے معاشی تعلقات کو مزید اگلے درجے تک لے جائے گا۔ یہ ایک علامتی سنگ میل ہے کیونکہ ہم 2022 میں اپنے سفارتی تعلقات کے قیام کی 70 ویں سالگرہ کے قریب پہنچ رہے ہیں۔

انڈس موٹر کمپنی لمیٹڈ کے چیف ایگزیکٹو جناب علی اصغر جمالی نے کہا “آج کی سرمایہ کاری کا اعلان ہماری کمیونٹی کے لیے آئی ایم سی کی مضبوط وابستگی کی نمائندگی ہے کیونکہ ہم پاکستان کو موسمیاتی تبدیلی سے کم خطرہ بنانے میں ٹھوس اقدامات کرتے رہیں گے۔

آئی ایم سی کی سرمایہ کاری سے پاکستان میں مقامی آٹوموبائل انڈسٹری کو خاطر خواہ فائدہ ہوا ہے۔ پاکستان میں روزانہ کی بنیاد پر 200 ملین روپے سے زیادہ کے پرزہ جات تیار کیے جارہے ہیں۔ مختلف کمپنیاں 60 سے زیادہ گاڑیوں کے پارٹس تیار کررہی ہیں۔ سارے پاکستان میں 60 ہزار سے زیادہ لوگ براہ راست اور بالواسطہ طور آٹوموبائل انڈسٹری سے جڑے ہوئے ہیں۔

Facebook Comments Box