ایشیائی ترقیاتی بینک اور عالمی بینک نے پاکستان کے لیے 18 کروڑ 50 لاکھ ڈالر کی منظوری دے دی

10 کروڑ ڈالر خیبر پختونخوا کے سیلاب متاثر اور انفراسٹرکچر کی بحالی اور 8.5 کروڑ ڈالر پاکستان کے سیلاب متاثرین کے ریلیف کے لیے استعمال ہوگی۔

پاکستان کی معیشت کے لیے اچھی خبر، ایشیائی ترقیاتی بینک (اے ڈی بی) نے پاکستان کیلئے 10 کروڑ ڈالر قرض کی منظوری دے دی ہے جبکہ عالمی بینک نے پاکستان کے سیلاب متاثرین کے لیے 8 کروڑ 50 لاکھ ڈالر کی منظوری دے دی ہے۔

ایشیائی ترقیاتی بینک نے پاکستان کے لیے 10 کروڑ ڈالر فراہم کرنے کے سلسلے میں خصوصی بیان جاری کیا ہے۔  اے ڈی بی کے مطابق یہ رقم صوبہ خیبر پختونخوا کے صحت کے نظام میں بہتری کیلئے خرچ کی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیے

پاکستان میں مالی سال 2023 میں مہنگائی کی شرح 18 فیصد تک رہے گی، ایشیائی ترقیاتی بینک

پیٹرول کے بعد وفاقی حکومت نے یوٹیلیٹی اسٹورز پر مہنگائی بم پھوڑ دیا

ایشیائی ترقیاتی بینک کے مطابق پروگرام کے تحت صحت کے حوالے سے سہولیات کے بنیادی ڈھانچے کو جدید کیا جائے گا۔

ترجمان اے ڈی بی کے مطابق یہ رقم اسپتالوں میں صحت کی خدمات کی فراہمی کو بہتر بنانے کیلئے خرچ ہوگی۔

اعلامیہ کے مطابق انسانی وسائل کی منصوبہ بندی اور ادویات کی سپلائی چین کے انتظام کو بہتر بنانا ہوگا۔

ایشیائی ترقیاتی بینک کے ترجمان کا کہنا ہے کہ کورونا کے بعد پاکستان کو اب غیر معمولی سیلاب کا سامنا ہے، سیلابی پانی سے  پیدا ہونے والی بیماریوں کے خطرے بڑھ رہے ہیں۔ منصوبہ اسپتالوں میں خدمات کے معیار کو بہتر بنانے میں کلیدی کردار ادا کرے گا۔

ماہرین معاشیات کے مطابق یہ فیصلہ خوش آئند ہے کہ  ایشیائی ترقیاتی بینک نے صحت عامہ کیلئے خیبر پختون خوا میں فنڈنگ کا اعلان کیا ہے، اس سے صوبے میں پسماندہ ترین اضلاع میں عوام کو بہتر طبی سہولیات میسر آئیں گی۔

دوسری جانب عالمی بینک نے پاکستان کے سیلاب متاثرین کی بحالی کے کاموں میں ریلیف فراہم کرنے کے لیے 8 کروڑ 50 لاکھ ڈالر کی رقم فراہم کرنے کا اعلان کیا ہے۔

ترجمان عالمی بینک کے مطابق اعلان کردہ رقم سیلاب متاثرین کی بحالی اور ریلیف کے کاموں میں استعمال کی جائے گی۔

متعلقہ تحاریر