پاکستان کی فلم اور ڈرامہ انڈسٹری کے لیے خوشخبری

نئی فلم پالیسی میں فلموں پر سے تمام بڑے ٹیکسز ختم کردیے جائیں گے۔

پاکستان کی فلم اور ڈرامہ انڈسٹری کی بہتری کے لیے حکومت پاکستان جلد ہی نئی پالیسی کا اعلان کرے گی۔

پاکستان کے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر لکھا ہے کہ نئی فلم پالیسی کا اعلان آئندہ ماہ تک کردیا جائے گا اور نئی فلم پالیسی میں فلموں پر سے تمام بڑے ٹیکسز ختم کردیے جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیے

پاکستان میں ذرائع ابلاغ سے وابستہ افراد فلسطین کے لیے ہم آواز

فواد چوہدری نے لکھا ہے کہ نئی پالیسی سے پاکستان کی فلم اور ڈرامہ انڈسٹری کو فائدہ ہوگا۔ امید ہے کہ اس پالیسی سے پاکستان کی فلم انڈسٹری پر بہترین اثرات مرتب ہوں گے۔

نئی فلم پالیسی کے اعلان سے قبل پاکستان فلم پروڈیوسرز ایسوسی ایشن (پی ایف پی اے) کے نمائندگان نے فواد چوہدری سے ملاقات کی تھی۔ اس ملاقات میں فلموں پر سے تمام بڑے ٹیکسز ختم کرنے کے سمیت دیگر اہم معاملات پر بھی گفتگو کی گئی تھی۔

پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے ستمبر 2020 میں فلم انڈسٹری کی بہتری کے لیے فلم پالیسی بنانے کی ہدایت کی تھی۔ عمران خان کی ہدایت پر فواد چوہدری نے دیگر وزارتوں اور اداروں کے ساتھ مل کر فلم پالیسی پر کام شروع کیا تھا۔

 وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی شبلی فراز نے اکتوبر 2020 میں اعلان کیا تھا کہ مارچ 2021 تک فلم پالیسی کو نافذ کردیا جائے گا۔

ایٹریم سنیما کے مالک ندیم مانڈوی والا نے گذشتہ ہفتے نیوز 360 کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان کے سنمیا کا نقصان فروری  2019 میں اس وقت ہوا تھا جب ملک میں بالی ووڈ کی فلموں پر پابندی عائد گی گئی تھی۔ اس کے بعد کرونا کی وباء کی وجہ سے سنیما انڈسٹری انتہائی مشکل حالات کا شکار ہو رہی ہے۔ ہم حکومت پاکستان سے درخواست کررہے ہیں کہ وہ پاکستان کے سنیما کو بچائیں، اس کی مدد کریں ورنہ سنیما بند ہو جائیں گے۔

متعلقہ تحاریر