ماہرہ خان نے آئی بی اے انتظامیہ کے رویے کو شرمناک قرار دے دیا

آئی بی اے انتظامیہ کی جانب سے طالبعلم کو بےدخل کرنے پر عوام کا سخت ترین ردعمل سامنے آرہا ہے، شوبز شخصیات بھی آئی بی اے کی ہٹ دھرمی پر حیرت زدہ ہیں۔

گزشتہ دنوں انسٹی ٹیوٹ آف بزنس ایڈمنسٹریشن کی انتظامیہ نے خاتون اسٹاف افسر کے ساتھ ہونے والے ہراسگی کے واقعے پر شفاف تحقیقات کا مطالبہ کرنے والے طالبعلم جبرائیل کو بےدخل کردیا۔

آئی بی اے انتظامیہ کی جانب سے طالبعلم کو بےدخل کرنے پر عوام کا سخت ترین ردعمل سامنے آرہا ہے۔ آئی بی اے کو پاکستان کی اعلیٰ جامعات میں شمار کیا جاتا ہے۔

شوبز شخصیات بھی آئی بی اے کی ہٹ دھرمی پر حیرت زدہ ہیں۔ اداکارہ ماہرہ خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر واقعے کو شرمناک قرار دیتے ہوئے افسوس کا اظہار کیا ہے۔

ماہرہ کی ٹویٹ پر معروف فیشن ڈیزائنر ماہین خان نے کہا کہ یہ ایک قابل عزت ادارے کے لیے مکمل طور پر ناقابل قبول اور شرمناک ہے۔

پیپلزپارٹی رہنما شرمیلا فاروقی نے بھی جبرائیل کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا اور آئی بی اے یونیورسٹی کے اقدام پر سخت تنقید کی۔

یاد رہے کہ طالبعلم جبرائیل کو بےدخلی کا نوٹس آئی بی اے کے ایگزیکٹیو ڈائریکٹر اکبر زیدی نے دیا ہے۔ یہ وہی اکبر زیدی ہیں جو اپنی تقاریر میں طلبہ یونینز کی اہمیت پر بڑے لیکچر دیتے رہے ہیں۔

اب جب کہ اکبر زیدی کی یونیورسٹی کا ہی ایک طالبعلم خاتون افسر سے ہراسانی میں ملوث افراد کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کررہا ہے تو اسے یونیورسٹی سے بےدخل کردیا گیا ہے۔

دیکھتے ہیں اکبر زیدی آئندہ بھی طلبہ تنظیموں کی اہمیت اور جمہوری و آئینی حقوق پر لیکچر دیں گے یا اب وہ نام نہاد "نظم و ضبط” قائم کرنے کے لیے "آمرانہ طرز حکومت” کی حمایت کریں گے۔

Facebook Comments Box