کنگنا رناوت ہتک عزت کے مقدمے میں عدالت طلب

کنگنا نے خاتون کے حوالے سے تضحیک آمیز "جھوٹے تبصرے" کرتے ہوئے شاہین باغ کے احتجاج کا حصہ قرار دیا

مہندر کور نامی خاتون  کو شاہین باغ  میں احتجاج کرنے والی خواتین سے موازنہ کرنے پر ہتک عزت کادعویٰ  ، عدالت نے کنگنا رناوت کو طلب کرلیا

آئے روز کسی نا کسی پر تنقید کرنے اور متنازع بیانات کے باعث خبروں میں رہنے والی بالی وڈ کی بے باک اداکارہ کنگنا رناوت کو بھٹنڈا کی مقامی عدالت نےگذشتہ برس دائر کردہ ہتک عزت کی درخواست پر طلب کرلیا ہے ، وکیل رابیر سنگھ بیھنیوال نے گذشتہ سال  بھٹنڈاہ کی عدلت میں کنگنا رناوت کے خلاف درخواست دائر کی تھی جس میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ  کنگنا نے ان کی مؤکلہ مہندر کور نامی خاتون   خاتون  کو شاہین باغ  میں احتجاج کرنے والی خواتین سے موازنہ کرتے ہوئے ان کے خلاف تضحیک آمیز "جھوٹے تبصرے” کیے اور کہا کہ وہ وہی "دادی” ہیں جو شاہین باغ کے احتجاج کا حصہ تھیں۔

یہ بھی پڑھیے

منور فاروقی اور کنگنا رناوٹ ‘لاک اپ’ میں ایک ساتھ

متنازع اداکارہ کنگنا رناوت کی فلم ‘ گنگو بائی کاٹھیاواڑی’پر تنقید

درخواست  گزار نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ  کنگنا رناوت کے خلاف ہتک عزت کا یہ کیس  گذشتہ  سال جنوری میں دائر کیا گیا تھا ، جس میں عدالت نے کنگنا رناوت کو 19 اپریل کو طلب کیا ہے۔درخواست گزار نے یہ بھی کہنا تھا کہ ان کی مؤکلا کا تعلق شاہین باغ سے نہیں بلکہ بھٹنڈا کے ایک گاؤں بہادرگڑھ جانڈیاں سے ہے

واضح رہے کہ گزشتہ سال بھارت میں کسانوں کے مودی حکومت مخالف احتجاج کے دوران کنگنا رناوت نے ایک ٹوئٹ میں مہندر کور کو شاہین باغ کی دادی کہہ دیا تھا جبکہ وہ اس احتجاج میں موجود نہیں تھیں۔ کنگنانے اس بزرگ خاتون کے لیے تحریر کیا تھا کہ یہ 100 روپے کے لیے ہر احتجاج میں شامل ہو جاتی ہیں۔

متعلقہ تحاریر