جانور ظاہر جعفر کو سزا مل جاتی تو شاید! بشریٰ انصاری کا سارہ انعام کے قتل پراظہار افسوس

 یہ پڑھی لکھی آزاد لڑکیاں  نشے کے عادی  اورناقابل پیشگوئی  بیمار شخص کے رویے کا پتہ  لگاکر انہیں چھوڑکیوں نہیں سکتیں؟سینئر اداکارہ

سینئر اداکارہ بشریٰ انصاری نے اسلام آباد میں سینئر صحافی ایاز امیر کے بیٹے شاہنواز امیر کے ہاتھوں ان کی بہو سارہ انعام کے قتل پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے پڑھی لکھی لڑکیوں کے حوالے اہم سوال اٹھادیا۔

اداکارہ نے نور مقدم قتل کیس کے مرکزی ملزم ظاہر جعفر کے حوالے سے بھی اہم انکشاف کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

سارہ انعام قتل: ملک اور بیرون ممالک حصول انصاف کیلئے آوازیں بلند ہوگئیں

معروف صحافی ایاز امیر کے بیٹے شاہنواز امیر نے اپنی اہلیہ کو قتل کردیا

اداکارہ بشریٰ انصاری نے اپنی انسٹاگرام پوسٹ میں سارہ انعام اور انکے قاتل شوہر شاہنواز امیر کی تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھاکہ  اگراُس جانور ظاہر جعفر کو عبرت ناک سزا مل جاتی تو شاید! وہ ایک  ایئرکنڈیشنڈ نفسیاتی اسپتال(نام نہاد) میں بہترین ذہنی علاج کے مزے لے رہا ہے۔جس کے بعد بطور امریکی شہری وہ مزید علاج کیلیے امریکاچلا جائے گا اور پھر لوگ اسےبھول جائیں گے جوکہ وہ پہلے ہی بھول چکے ہیں۔

 

View this post on Instagram

 

A post shared by Bushra Bashir (@ansari.bushra)

انہوں نے لکھا کہ کاش ان کے والدین  انہیں بچانے کی  کوششیں کرنے کے بجائے خود ہی انہیں سزائے موت دینے کی درخواست کریں۔انہوں نے سوال کیا کہ  یہ پڑھی لکھی آزاد لڑکیاں  نشے کے عادی  اورناقابل پیشگوئی  بیمار شخص کے رویے کا پتہ  لگاکر انہیں چھوڑکیوں نہیں سکتیں؟انہوں نے مزید لکھا کہ دکھ کی بھی کوئی حد ہوتی ہے اور وہ حد بھی اب شاید ختم ہوگئی ہے۔

متعلقہ تحاریر