76 فیصد پاکستانی کرونا کو روکنے کی حکومتی حکمت عملی سے مطمئن

حالیہ گیلپ  سروے  میں حیران  کن  اعداد و  شمار  دیکھنے  میں  آئے۔

ملک  میں  کرونا  وائرس  سنگین  صورتحال  اختیار  کررہا  ہے  لیکن ایک  بات  خوش  آئند  ہے  کہ  حکومت  کرونا  ویکسین  پر  لوگوں  کا  اعتماد  حاصل  کرنے  میں بڑی  حد  تک کامیاب  ہوگئی  ہے۔ گیلپ  سروے  کے  مطابق  76  فیصد پاکستانیوں  نے  کرونا سے  بچاؤ کی حکومتی حکمت عملی پر اعتماد  کا  اظہار  کیا  ہے۔

حکومت پاکستان نے ویکسینیشن کے عمل کو بہتر بنانے کے لیے 100 سے زائد ویکسینیشن سینٹرز ، ڈرائیو تھرو  سینٹرز اور موبائل یونٹس کی سہولیات فراہم کی ہیں۔ حکومت  کی یہی  کاوشیں  رنگ  لے  آئیں۔ وہ لوگ  جو  کرونا  کی  شروعات  میں بالکل  یقین  نہیں  رکھتے تھے کہ  پاکستانی  حکومت وبا کے  حوالے  سے  خاطرخواہ  اقدامات  کرئے  گی، وہ  بھی حکومت  کی  حکمت  عملی  کو  درست  تسلیم  کرنے  لگے  ہیں۔ یہی  وجہ  ہے  کہ  حالیہ گیلپ  سروے  میں حیران  کن  اعداد و  شمار  دیکھنے  میں  آئے۔

 سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ٹوئٹ میں سربراہ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) اسد عمرنے کرونا  کے  حوالے  سے  حکومت کی  ایک  اور  کامیابی  کا اعلان کیا۔ گیلپ  سروے  کی  روشنی  میں اسد  عمر  نے بتایا  کہ 76  فیصد پاکستانیوں نے حکومت کی کرونا سے مقابلہ کرنے کی حکمت عملی پر اعتماد کا اظہار کیا  ہے۔

یہ  بھی  پڑھیے

ویکسین لگوائیں ورنہ بنیادی سہولیات سے محروم ہوجائیں

اسد  عمر  نے  کہا  کہ اظہار اعتماد  سے  وہ  تمام  لوگ جو اس قومی کاوش میں شامل ہیں ان کی حوصلہ افزائی ہوگی۔  سربراہ این سی او سی  نے  واضح  کیا  کہ  خطرہ ابھی ٹلا نہیں ہے۔

اس  کے  برعکس  55 فیصد پاکستانی اب بھی یہ رائے رکھتے ہیں کہ کرونا وائرس کا خطرہ مبالغہ آمیز ہے۔ گیلپ سروے  کے  مطابق 60 فیصد پاکستانی ابھی تک نہیں جانتے کہ کرونا کی ویکسینیشن کے لیے کیسے خود  کو رجسٹر کرانا  ہے، اس  بات  سے عوام میں آگاہی کا فقدان ظاہر ہوتا ہے۔

Facebook Comments Box