یورو کپ سے باہر ہونے کے بعد فرانس کے فٹبالرز اسکینڈل کی زد میں

فرانسیسی فٹبالرز عثمان ڈیمبلے اور اینٹونیو گریزمان کی ایک ویڈیو وائرل ہورہی ہے جو میں دونوں کھلاڑی ایشیائی باشندوں کو مذاق اڑا رہے ہیں۔

فرانس کی قومی فٹبال ٹیم کو یورو کپ 2020-21 سے باہر ہوئے ابھی کچھ روز ہی گزرے ہیں کہ ان کی ٹیم کے دو فٹبالرز کو نسل پرستی اسکینڈل کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

لا لیگا کے مشہور زمانہ کلب ایف سی بارسلونا کی نمائندگی کرنے والے معروف فرانسیسی فٹبالرز اینٹونیو گریزمان اور عثمان ڈیمبلے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے، جس میں دونوں فٹبالرز بظاہر ایشیائی باشندوں کو تمسخر اڑاتے دیکھے جاسکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

انگلینڈ کے 7 کرکٹرز کرونا وائرس میں مبتلا

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ دونوں کھلاڑی ایشیائی نسل کے باشندوں کی نقل اتار رہے ہیں اور مذاق اڑا رہے ہیں۔ یہ ویڈیو کب بنائی گئی اس حوالے سے ابھی تفصیلات سامنے نہیں آئی ہیں۔

 

فرنسیسی کھلاڑیوں کی ویڈیو اس وقت سامنے آئی ہے جب عالمی چیمپئن یورو کپ کے ایک کوارٹر فائنل مقابلے میں ورلڈ چیمپئن فرانس ، سوئٹزرلینڈ سے پنیلٹی شوٹ آوٹ میں شکست کے بعد ٹورنامنٹ سے باہر ہوگیا تھا۔

سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو میں اینٹونیو گریزمان اور عثمان ڈیمبلے ایشیائی باشندوں کو ‘بدنما چہروں والا‘ کہتے سنے جا سکتے ہیں جبکہ دونوں کھلاڑی ان کی زبان کا بھی مذاق بنا رہیے ہیں۔

اس ویڈیو کو مبینہ طور پر عثمان ڈیمبلے نے شوٹ کیا جبکہ ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ اینٹونیو گریزمان اُن 4 ایشیائی باشندوں کا مذاق اڑا رہے ہیں، جو ان کے کمرے میں رکھے ٹیلی وژن کا کوئی نقص دور کررہے ہیں۔

دوسری جانب سوشل میڈیا صارفین کا کہنا ہے کہ ویڈیو بظاہر نئی نہیں ہے کیونکہ ویڈیو میں بالوں کا جو اسٹائل اینٹونیو گریزمان نے اپنا رکھا ہے وہ آج کل نہیں ہے۔

تاہم سوشل میڈیا صارفین کا یہ بھی کہنا ہے کہ چاہے یہ ویڈیو پرانی ہی کیوں نا ہو لیکن ان دونوں کھلاڑیوں کی جانب سے ایسا رویہ قابل قبول نہیں ہے۔

واضح رہے کہ فٹبال کی عالمی تنظمی فیفا کا سلوگن ” تعاصب سے پاک ” ہے۔ جس کی مذکورہ بالا دونوں کھلاڑیوں نے سخت خلاف ورزی کی ہے۔

Facebook Comments Box