سابق بیڈمنٹن چیمپئن تانیہ ملک وومن کرکٹ ٹیم کی ہیڈکوچ مقرر

تانیہ ملک نے لمز یونیورسٹی سے ماسٹر کی ڈگری حاصل کی تھی اور 1986 کے سیئول ایشین گیمز میں پاکستان کی نمائندگی کی تھی۔

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے اپنی حکمت عملی پر نظر ثانی کرتے ہوئے سابق قومی بیڈمنٹن چیمپئن تانیہ ملک کو وومن کرکٹ کا سربراہ مقرر کیا ہے، جسے ماہرین نے بہترین فیصلہ قرار دیا ہے۔

پی سی بی کی جانب سے جاری ہونے والے اعلامیے کے مطابق تانیہ ملک یکم اکتوبر سے اپنے عہدے کا چارج سنبھالیں گی، وہ عروج ممتاز کی جگہ لے رہی ہیں، جنہوں نے مئی میں صرف سلیکشن کے معاملات پر توجہ مرکوز کرنے کے لیے اضافی ذمہ داریوں سے علیحدگی اختیار کرلی تھی۔

یہ بھی پڑھیے

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے لیے پاکستان کرکٹ ٹیم کی تباہ کن تیاریاں

پی سی بی نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر وومن کرکٹ کی نئے نامزد کردہ سربراہ کی خبر شیئر کی۔

کھیلوں کے تجزیہ کار عمر فاروق کالسن نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام شیئر کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ” تانیہ ملک کا وومن کرکٹر ٹیم کی بہتری کے لیے بہتر انتخاب ہے۔”

عمر فاروق نے مزید لکھا ہے کہ "تانیہ ملک اسپورٹس ایسوسی ایشن کے ساتھ کام کرنے کی وجہ سے ایک غیر معمولی انتظامی پروفائل رکھتی ہیں۔”

تانیہ ملک نے لمز یونیورسٹی سے ماسٹر کی ڈگری حاصل کی تھی، 1986 سیئول ایشین گیمز میں پاکستان کی نمائندگی کی ، انہوں نے 1987-88 قومی بیڈمنٹن کا ٹائٹل اپنے نام کیا تھا۔

وہ 2010 سے پنجاب اولمپک ایسوسی ایشن (پی او اے) کی نائب صدر ، پنجاب سکواش ایسوسی ایشن (پی ایس اے) کی نائب صدر ہیں، اور اس وقت پاکستان اولمپک ایسوسی ایشن کی تعلیم اور خواتین کمیشن کی رکن کی حیثیت سے خدمات انجام دے رہی ہیں۔

انہوں نے کثیرالقومی تنظیموں کے ساتھ کام کرنے کے علاوہ ورلڈ بینک کے ساتھ بھی کام کیا ہے۔ جو خواتین کو مضبوط بنانے کے حوالے سے منصوبوں پر کام کررہا ہے۔

Facebook Comments Box