زارا نور عباس نے قرنطینہ کے شب و روز کیسے گزارے؟

زارا نے اپنے قرنطینہ کے دنوں سے متعلق بات کرکے لوگوں کو آگاہی دی ہے کہ ویکسین لگوائیں اور وائرس سے محفوظ رہیں۔

معروف اداکارہ زارا نور عباس کورونا وائرس کو شکست دے کر صحت یاب ہوچکی ہیں۔ یہ بات انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ انسٹاگرام پر بتائی ہے۔

زارا نے لکھا کہ "پچھلے کچھ دن میری سوچ سے کہیں زیادہ سخت گزرے ہیں، آپ کے جسم اور دماغ کا میکانزم آپ کو اس انداز میں قابو کرتا ہے جیسا آپ نے کبھی تصور بھی نہیں کیا ہوگا”۔

نہایت کم عرصے کے دوران ڈرامہ اور فلم انڈسٹری میں بےپناہ شہرت حاصل کرنے والی زارا نور عباس نے مزید لکھا کہ قرنطینہ کے دوران میں نے فلمیں دیکھیں، ان فنکاروں کو یاد کیا جو دنیا سے رخصت ہوچکے ہیں، کتابیں پڑھیں، میری سونگھنے اور چکھنے کی حس متاثر تھی، میں روئی، صبر کیا اور ایک لمحے کو سوچا کہ ہم سب کو زندگی میں کتنی زیادہ نعمتیں ملی ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

یکم اکتوبر سے ویکسین نہ لگوانے والوں کے لیے سارے دروازے بند

کورونا وائرس سے اب تک جتنے بھی افراد صحت یاب ہونے میں کامیاب ہوئے ہیں انہوں نے اپنے تجربات شیئر کیے ہیں۔ وائرس میں مبتلا افراد کو قرنطینہ میں رہنا پڑتا ہے جس کے باعث وہ اپنے اہل و عیال سے بھی ملاقات نہیں کرسکتے۔

یہاں تک تو معاملہ پھر ٹھیک ہے لیکن وہ افراد جو خدانخواستہ اسپتال کے آئیسولیشن وارڈ میں داخل ہوجائیں ان کے لیے یہ وقت گزارنا نہایت مشکل ہوتا ہے۔

زارا نے اپنے قرنطینہ کے دنوں سے متعلق بات کرکے لوگوں کو آگاہی دی ہے کہ ویکسین لگوائیں اور وائرس سے محفوظ رہیں۔

یاد رہے کہ یکم اکتوبر سے ویکسی نیشن نہ کروانے والے افراد کے لیے مختلف پابندیوں کا اعلان پہلے ہی کیا جاچکا ہے، ویکسین ڈوز مکمل نہ کروانے والے شہریوں کو تعلیمی اداروں، شاپنگ مالز، ریسٹورینٹس اور سفر کرنے میں مشکلات کا سامنا ہوگا۔

Facebook Comments Box