عمران خان متحدہ عرب امارات کے سب سے بڑے اسپورٹ ایوارڈ کے لیے نامزد

سینیٹر فیصل جاوید نے یو اے ای کی جانب وزیراعظم کے لیے ایوارڈ کی نامزدگی کے اعلان کو ٹوئٹر پر شیئر کیا ہے۔

متحدہ عرب امارات نے وزیراعظم عمران خان کو کھیلوں کی خدمات کے عوض "پریسٹیجیئس راشد المکتوم کری ایٹو اسپورٹ ایوارڈ” کے لیے نامزد کیا ہے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام شیئر کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے سینیٹر فیصل جاوید نے پیغام شیئر کرتے ہوئے لکھا ہے کہ "وزیراعظم عمران خان کو ان کھیلوں کی خدمات کے عوض "پریسٹیجیئس راشد المکتوم کری ایٹو اسپورٹ ایوارڈ” کے لیے نامزد کیا ہے۔”

یہ بھی پڑھیے

وسیم اکرم کو ٹیم سے باہر رکھنے کی کوشش کی گئی، سابق ڈاکٹر کا انکشاف

شاہنواز دھانی کو ڈیبیو کرنے پر فہدمصطفیٰ کی سندھی میں مبارکباد

سینیٹر فیصل جاوید نے مزید لکھا ہے کہ "محمد بن راشد المکتوم تخلیقی ایوارڈ عالمی سطح پر ان کی افراد کو دیا جاتا ہے جنہوں نے اپنی زندگی میں نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہوتی ہیں۔”

واضح رہے کہ سن 1992 کا 50 اوورز پر مشتمل ورلڈ کپ نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کی مشترکہ میزبانی میں کھیلا گیا ۔ میزبان ٹیموں کے علاوہ مزید 7 ٹیموں نے اس ورلڈ کپ میں حصہ لیا تھا، یعنی کُلی طور پر 9 ٹیمیں ورلڈ کا حصہ تھیں۔

1992 کے ورلڈ کپ میں حصہ لینے والی ٹیمیں

1: آسٹریلیا (1987 کےورلڈ کپ کی فاتح ٹیم)

2: انگلینڈ

3: نیوزی لینڈ

4: بھارت (1983 کے ورلڈ کپ کی فاتح ٹیم)

5: پاکستان

6: جنوبی افریقہ

7: سری لنکا

8: ویسٹ انڈیز (1975 ، 1979 ورلڈ کپ کی فاتح ٹیم)

9: زمبابوے

1992 کا ورلڈ کپ پاکستانی ٹیم نےجیتا تھا۔ ٹیم کی قیادت موجودہ وزیراعظم عمران خان نے کی تھی۔

پہلے سیمی فائنل میں انگلینڈ نے نیوزی لینڈ کو شکست دے کر فائنل میں رسائی حاصل کی تھی جبکہ پاکستان نے آسٹریلیا کو ہرا کے فائنل میں جگہ بنائی تھی۔

فائنل میں پاکستان نے کرکٹ کی بنیاد رکھنے والے ملک انگلینڈ کو 22 رنز سے شکست دےکر ورلڈؑ کپ کا ٹائٹل اپنے نام کیا تھا۔

پاکستان نے پہلے کھیلتے ہوئے مقررہ 50 اوورز  میں 6 وکٹوں کے نقصان پر 249 رنز اسکور کیے تھے جبکہ جواب میں انگلینڈ کی ساری ٹیم 49.2 اوورز کھیل کر 227 رنز پر ڈھیر ہو گئی تھی۔

کپتان عمران نے شاندار بیٹنگ کرتے ہوئے گراؤنڈ کے چاروں اطراف بہترین اسٹورکس کھیلے اور 72 رنز اسکور کیے۔ انہوں نے 110 گیندوں کا سامنا کیا تھا۔ ان کی اننگز میں 5 چوکے اور 1 چھکا شامل تھا۔ تاہم باؤلنگ میں انہیں خاطر خواہ کامیابی نہیں ملی تھی اور انہوں نے 6.2 اوورز میں 42 رنز دےکر 1 وکٹ حاصل کی تھی۔

Facebook Comments Box