کورونا کیسز میں کمی ، حکومت نے نئی سفری سہولیات کی اجازت دے دی

گلگت، مردان اور مظفرہ آباد جہاں کورونا کیسز زیادہ ہیں کے علاوہ ملک بھر میں کورونا پابندیاں نرم کر دی گئی ہیں۔

حکومت نے ملک میں کورونا کیسز میں کمی پر ٹرینوں میں مسافروں کی گنجائش 80 سے بڑھا کر 100 فیصد جبکہ پبلک ٹرانسپورٹ میں 70 فیصد کی بجائے 80 فیصد مسافروں کو بٹھانے کی اجازت دے دی۔ تمام تعلیمی ادارے پر عائد پابندیاں بھی ختم کردیں۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (‏این سی او سی) کا جائزہ اجلاس وفاقی وزیر اسد عمر کی زیرصدارت ہوا۔ اجلاس میں کورونا کیسز کا جائزہ لیا گیا اور کورونا کیسز میں کمی پر پابندیاں اٹھانے کے سلسلے میں اہم فیصلے کئے گئے۔

یہ بھی پڑھیے

پاکستان کی قومی اسمبلی کو آسیان بین الپارلیمانی اسمبلی میں مبصر کا درجہ مل گیا

اسلام آباد ہائیکورٹ میں 233 ارب کے مقدمات زیرالتواء ہیں، فواد چوہدری

اجلاس کے فیصلے کے مطابق 10 فیصد سے کم کورونا سے متاثرہ شہروں میں پابندیوں میں نرمی کا فیصلہ کیا گیا جبکہ گلگت، مردان، مظفرہ آباد میں پابندیاں برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا گیا۔

این سی او سی کے نوٹی فکیشن کے مطابق چار دیواری کے اندر اجتماعات میں شرکا کی تعداد 300 سے بڑھا کر 500 کرنے کی اجازت کردی گئی جبکہ چار دیواری کے باہر تقریبات اور اجتماعات کی بھی اجازت ہوگی۔

این سی او سی کے مطابق پبلک ٹرانسپورٹ میں مسافروں کی گنجائش 70 سے بڑھا کر 80 فیصد کر دی گئی، تاہم سفر کے دوران مشروبات کی تقسیم پر 28 فروری تک پابندی برقرار رہے گی۔

ٹرینوں میں 80 فیصد مسافر بٹھانے کی شرط ختم کرتے، 100 فیصدمسافر بٹھانے کی اجازت دے دی گئی۔ تعلیمی ادارے بھی این سی او سی کے قواعد و ضوابط کے تحت کھولنے کی اجازت دے دی گئی۔

 گلگت، مردان اور مظفرہ آباد جہاں کورونا کیسز زیادہ ہیں کے علاوہ ملک بھر میں کورونا پابندیاں نرم کر دی گئی ہیں۔

متعلقہ تحاریر