محکمہ ریلوے کی غفلت ، لینس ڈاﺅن برج خستہ حالی کا شکار

شہری و سماجی حلقوں نے وفاقی وزیر ریلوے ، سکھر انتظامیہ سمیت متعلقہ محکموں کے بالا حکا م سے نوٹس لیکر پل کی تزئین و آرائش کا مطالبہ کیا ہے۔

محکمہ ریلوے اور سکھر انتظامیہ کی غفلت ، سکھر اور روہڑی کو ملانے والا لینس ڈاﺅن برج خستہ حالی کا شکار، ریلوے کی عدم توجہی نے برج کو تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا، پیدل راستے میں لگائے گئے پھٹے گل سڑ گئے، سماجی حلقوں میں تشویش کی لہر ، وفاقی وزیر ریلوے سمیت دیگر بالا حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ ریلوئے سکھر ڈویژن اور سکھر انتظامیہ کی مجرمانہ غفلت کے باعث سکھر شہر اور روہڑی شہر کو آپس میں ملانے والے قدیمی لینس ڈاﺅن برج خستہ حال کا شکار ہو گیا ہے ، متعلقہ محکموں کے افسران و عملے کی ناقص کارکردگی اور مختص فنڈز خرچ کئے جانے کے باوجود ہے۔

یہ بھی پڑھیے

سندھ کے حکمران عوام کو نوچ نوچ کر کھا رہے ہیں، ڈاکٹر فہمیدہ مرزا

پشاور کی جامع مسجد میں خودکش دھماکہ، داعش نے ذمہ داری قبول کرلی

لینس ڈاﺅن برج کا ڈھانچہ جگہ جگہ سے گل رہا ہے، جبکہ برج کے دونوں اطراف پیدل چلنے والوں کا راستہ بھی انتہائی مخدوش حالت میں دیکھائی دیتا ہے جبکہ پیدل راستے میں لگائے گئے پھٹے کہی سے گل سڑ گئے ہیں تو کئی پٹھے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو گئے ہیں۔

پٹھے ٹوٹنے کے باعث پیدل چلنے والے شہریوں میں خوف کی فضاءپیدا ہو گئی ہے انہوں نے متبادل راستے کی جگہ برج پر چلنے والی تریفک کے درمیان چلنے اختیار کر رکھا ہے۔

اس صورتحال پر سکھر اور روہڑی کی شہری و سماجی حلقوں نے گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اس محکمہ ریلوے سکھر ڈویژن اور سکھر انتظامیہ کو بھی سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ کئی سالوں سے پل پر رنگ نہیں ہوا۔

برج کی تزئیین و آرائش کیلئے لاکھوں نہیں بلکہ کروڑوں فنڈ آتا ہے لیکن کہاں جاتا ہے آج تک اس کا کچھ معلوم نہیں ہے اور اب برج مکمل طور پر خستہ حال ہو گیا ہے۔

برج پر صفائی تو درکنار ٹوٹنے والے حفاظتی جنگلے بھی درست نہیں کئے جاتے ہیں۔ شہری و سماجی حلقوں نے وفاقی وزیر ریلوے ، سکھر انتظامیہ سمیت متعلقہ محکموں کے بالا حکا م سے نوٹس لیکر شہریوں کی زندگیاں بچانے سمیت پل کی تزئین و آرائش سمیت دیگر مرمتی کام کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ تحاریر