اسلام آباد پولیس پر دہشتگردوں کا حملہ، 1 اہلکار جاں بحق، 2 دہشتگرد ہلاک

پولیس حکام کے مطابق فائرنگ کا واقعہ کراچی کمپنی پولیس کی حدود سیکٹر جی ایٹ میں پیش آیا۔

پیر اور منگل کی درمیانی رات وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں دہشتگردوں کے حملے میں ایک پولیس اہلکار جاں بحق ہوگیا جبکہ فائرنگ کے تبادلے میں 2 حملہ آور بھی مارے گئے۔

اسلام آباد پولیس حکام کے مطابق فائرنگ کا تبادلہ کراچی کمپنی پولیس کی حدود سیکٹر جی ایٹ میں پیش آیا۔ جاں بحق ہونے والے پولیس اہلکار کی شناخت ہیڈ کانسٹیبل منور کے نام سے ہوئی ہے۔ فائرنگ کے تبادلے میں تین دیگر پولیس اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

سیالکوٹ میں معمر خاتون پر تشدد، وزیراعلیٰ پنجاب کا نوٹس، ملزمان گرفتار

دادو میں خودکشی کرنے والی میڈیکل کی طالبہ کا خط سامنے آگیا

پولیس حکام کے مطابق ان کے اہلکار معمول کے گشت پر تھے اور انہوں نے جیلانی چوک پر چوکی قائم کر رکھی تھی۔ حکام کا کہنا ہے کہ پولیس اہلکاروں نے موٹر سائیکل پر سوار دو افراد کو معمول کی چیکنگ کے لیے روکنے کی کوشش کی تو سواروں نے پولیس پارٹی پر فائرنگ کر دی۔

میڈیا کو تفصیلات دیتے ہوئے پولیس حکام کا کہنا تھا کہ مشتبہ دہشتگردوں میں ایک نے ہاتھوں پر سرجیکل دستانے اور چہرے پر اونی ماسک پہن رکھا تھا۔

مشتبہ دہشتگردوں کا حملہ اتنا اچانک تھا کہ فائرنگ کی زد میں آکر ناکے موجود چاروں پولیس اہلکار زخمی ہو گئے ، تاہم زخمی اہلکاروں نے جوابی فائرنگ کرتے ہوئے دو حملہ آوروں کو موت کی نیند سلا دیا۔ زخمی اہلکاروں کو طبی امداد کے لیے فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا تاہم ایک اہلکار زخموں کی تاب نالاتے ہوئے جاں بحق ہوگیا۔

حکام کا کہنا ہے کہ زخمی ہونے والے دو اہلکاروں کی حالت تشویشناک ہے۔

حملے کے فوری بعد آئی جی اسلام آباد محمد احسن یونس اور سینئر افسران موقع پر پہنچ گئے۔ سارے واقعے کو مانیٹر کیا۔

7 جنوری سے اسلام آباد میں پولیس اہلکاروں پر حملے کا یہ آٹھواں واقعہ بتایا جاتا ہے۔

متعلقہ تحاریر