ٍپاکستان میں صرف 19 فیصد خواتین کی انٹرنیٹ تک رسائی ہے، رپورٹ

ہمارا معاشرہ اب بھی اس حقیقت کو قبول کرنے کے لیے  تیار نہیں ہے کہ خواتین کو اپنی زندگی کو آزادانہ طورپر گزارنے کا پورا حق ہے

خواتین کے عالمی دن کے موقع پر پاکستا ن کی معروف موبائل   فون کمپنی  ‘جاز’ کی جانب سے کئے گئے سروے میں انکشاف کیا گیا ہے کہ پاکستان میں صرف 19 فیصد خواتین کی انٹرنیٹ تک رسائی ہے، سروے پر اپنے رددعمل میں شنیرا اکرم نے کہا ہے کہ اس دور میں پاکستانی خواتین کی کثیر تعداد انٹرنیٹ سےمحروم ہے  یہ افسوسناک ہے۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ‘جاز ‘ کی جانب سے خواتین کے عالمی دن پر کئے جانے والے سروے  پر اپنے تبصرے میں پاکستان کرکٹ کے سابق کپتان اور سوئنگ کے سلطان وسیم اکرم کی اہلیہ نے  کہا ہے کہ  اس دور میں یہ جان کر حیرانی ہوتی ہے کہ پاکستان میں صرف 19% خواتین کو انٹرنیٹ تک رسائی حاصل ہے۔

یہ بھی پڑھیے

سخت سردی اور بارش، شنیرا اکرم غریبوں میں کمبل بانٹتی رہیں

شنیرا اکرم کے بعد سجل علی کو بھی پیپسی کانیا اشتہار کیوں پسند آگیا؟

انھوں نے کہا کہ ہمارا معاشرہ اب بھی اس حقیقت کو قبول کرنے کے لیے  تیار نہیں ہے کہ خواتین کو اپنی زندگی کو آزادانہ طورپر گزارنے کا پورا حق ہے ، انھوں نے لکھا کہ ہمیں ذہنیت کو بدلنے کی ضرورت ہے ۔

واضح رہے کہ اس سے قبل دنیا بھر میں موبائل آپریٹرز کے مفادات کی نمائندگی کرنے والی تنظیم سی ایس ایم اے کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق دنیا کےترقی پزیر  15 ممالک میں سے موبائل فون کی ملکیت رکھنے والے مرد و عورت کی تعداد میں سب سے زیادہ فرق پاکستان میں پایا جاتا ہے۔

متعلقہ تحاریر