پی ٹی آئی میں مخصوص لابی کو آگے لایا جارہا ہے، عامر لیاقت حسین

ایم این اے عامر لیاقت وفاقی وزیر علی زیدی سے ناراض ہیں، انہوں نے ٹوئٹر پر متعدد ٹویٹس کے ذریعے بتایا کہ انہیں سائیڈ لائن کردیا گیا ہے۔

پاکستان تحریک انصاف کے ٹکٹ سے ممبر قومی اسمبلی منتخب ہونے والے ڈاکٹر عامر لیاقت حسین نے پارٹی میں اندرونی اختلافات کو بےنقاب کر دیا، عامر لیاقت کراچی کے حلقہ این اے 245 سے ایم این اے منتخب ہوئے تھے۔

عامر لیاقت حسین نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی وزیر علی زیدی پارٹی میں موجود اپنی لابی کو آگے لا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اب تک ہر ناانصافی کو صرف وزیراعظم عمران خان کی وجہ سے برداشت کرتا رہا لیکن اب بس ہوچکی ہے، کارکنان کب تک خاموش رہیں گے؟

یہ بھی پڑھیے

سوئیڈن کی پہلی خاتون وزیراعظم نے ڈیڑھ گھنٹے بعدہی استعفیٰ کیوں دیدیا؟

وزیراعلیٰ بلوچستان نے استعفیٰ کیوں دیا؟ سینیٹر انوار الحق نے سب بتا دیا

عامر لیاقت نے ایک پارٹی عہدیدار اشرف جبار قریشی کی ایک ویڈیو شیئر کی جس میں اشرف جبار بتا رہے ہیں کہ ہم سمجھتے تھے کہ پارٹی میں پارلیمانی طرز عمل اپنایا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ علی زیدی اپنے گروپ کو آگے لا رہے ہیں، وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ مجھے کچھ وقت دیں، معاملات بہتر ہوجائیں گے لیکن کسی کو بھی موقع دینے کیلیے تین سال کافی ہوتے ہیں۔

عامر لیاقت حسین کو ماضی میں بھی کئی مواقعوں پر پارٹی کی سینیئر قیادت کے ساتھ مسائل رہے ہیں، انہوں نے جولائی 2020 میں اور اکتوبر 2021 میں اسمبلی کی رکنیت سے استعفیٰ دیا لیکن بعد ازاں وزیراعظم عمران خان کی مداخلت پر استعفیٰ واپس لے لیا۔

اب کی بار عامر لیاقت حسین بہت ‘غصے’ میں نظر آتے ہیں، لگتا ہے کہ وہ استعفیٰ بھی دے دیں گے، لیکن پتا نہیں کہ اب کی بار وہ استعفیٰ دیں گے تو واقعی مستعفی ہوجائیں گے یا کچھ دن بعد استعفیٰ واپس لے لیں گے۔

Facebook Comments Box