سیکورٹی فورسز ک شمالی وزیرستان میں آپریشن، بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود برآمد

آئی ایس پی آر کے مطابق گذشتہ دنوں فورسز نے بلوچستان کے ضلع ہوشاب میں ایک آپریشن کے دوران 10 دہشتگردوں کو ہلاک کردیا تھا۔

 سیکورٹی فورسز نے خفیہ اطلاعات کی بنیاد پر شمالی وزیرستان کے ضلع مادی خیل میں آپریشن کیا اور بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کر لیا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری ہونے والے اعلامیے کے مطابق جمعرات کی صبح سیکورٹی فورسز نے خیبرپختونخوا (کے پی) کے شمالی وزیرستان کے ضلع مادی خیل میں انٹیلی جنس بیسڈ آپریشن (IBO) کیا، آپریشن کے دوران بھاری تعداد میں خودکار ہتھیار اور گولہ بارود کے ذخیرے کو برآمد کرلیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

وفاقی حکومت کے حالیہ تمام آرڈیننسز اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج

نور مقدم قتل کیس میں مرکزی ملزم ظاہر جعفر کو سزائے موت

انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) کے مطابق سرچ آپریشن کے دوران بھاری مقدار میں اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کر لیا گیا۔

آئی ایس پی آر نے رپورٹ کیا، "برآمد کیے گئے ہتھیاروں اور گولہ بارود میں سب مشین گن، لائٹ مشین گن، آر پی جی 7، ہینڈ گرنیڈ، آر پی جی 7 راکٹ اور سینکڑوں متعدد کیلیبر راؤنڈز شامل ہیں۔”

بیان میں یہ بھی بتایا گیا کہ علاقے کے مقامی لوگوں نے آپریشن کو سراہا اور علاقے سے دہشت گردی کے خاتمے کے لیے اپنی مکمل حمایت کا اظہار کیا۔

واضح رہے کہ 23 فروری 2022 کو بلوچستان کے علاقے ہوشاب میں دہشت گردوں کے کیمپ اور ٹھکانے کی موجودگی کی اطلاع پر سیکیورٹی فورسز نے آپریشن کیا تھا۔ فائرنگ کے تبادلے میں دہشت گرد کمانڈر آصف عرف مکیش سمیت 10 دہشت گرد مارے گئے تھے۔

آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا تھا کہ مارے گئے دہشت گرد تربت اور پسنی کے علاقوں میں حالیہ فائرنگ اور سیکیورٹی فورسز پر حملوں میں ملوث تھے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق کارروائی میں مطلوب دہشت گرد مارے گئے جن میں حبیب نواز عرف شکیل، وحید اللہ، عبدالرحمان اور محمد اللہ شامل ہیں۔ اس نے مزید کہا کہ پانچویں دہشت گرد کی شناخت کی چھان بین کی جا رہی ہے۔

متعلقہ تحاریر