آئی ایم ایف کا دباؤ، نیپرا نے بجلی 95 پیسے فی یونٹ مہنگی کردی

نیپرا کے فیصلے کے مطابق بجلی کے 301 سے 700 یونٹ تک استمال پر 95 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی گئی۔

آئی ایم ایف کی شرائط کا دباؤ، نیپرا نے گٹھنے ٹیک دیئے،  آئی ایم ایف کی شرائط پر بجلی 95 پیسے فی یونٹ تک مزید مہنگی کردی گئی، تاہم صارفین پر اضافہ  53 پیسے فی یونٹ ہوگا۔

نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے بجلی 95 پیسے فی یونٹ تک مہنگی کرنے کافیصلہ جاری کردیا ہے۔  نیپرا نے اپنا فیصلہ وفاقی حکومت کو بھجوا دیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

امریکا اور برطانیہ نے روس سے تیل کی درآمد پر پابندی لگادی

اسٹیٹ بینک کی چھٹی مانیٹری پالیسی کا اعلان، شرح سود 9.75 فیصد برقرار

فاقی حکومت اضافے کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کرے گی۔ وفاقی حکومت کے نوٹیفکیشن کے بعد فیصلے کا اطلاق ہوگا۔

نیپرا کے فیصلے کے مطابق  بجلی کے بنیادی ٹیرف میں اوسط 53 پیسے اضافے کیا گیا ہے۔ مختلف سلیبز کیلئے بجلی 8 پیسے سے 95 پیسے تک فی یونٹ مہنگی کی گئی ہے۔

بجلی کے 100 یونٹ استعمال تک 8 پیسے فی یونٹ اضافہ کیا گیا ہے۔ بجلی کے 101 سے 200 یونٹ تک استعمال پر 18 پیسے فی یونٹ اضافہ کیا گیا ہے۔

فیصلے کے مطابق اب بجلی کے 201 سے 300 یونٹ استعمال پر 48 پیسے فی یونٹ اضافہ کیا گیا ہے۔ بجلی کے 301 سے 700 یونٹ تک استمال پر 95 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی گئی۔

بجلی کی قیمت میں اضافے کا اطلاق وفاقی حکومت کی منظوری سے ہوگا۔ نیپرا نے حکومتی پالیسی گائیڈ لائنز پر سماعت کے بعد فیصلہ جاری کیا ہے۔

اقدام کا مقصد پاور سیکٹر میں سبسڈی کا از سو نو تعین کرنا ہے۔ اس فیصلے کا اطلاق کے الیکٹرک کے صارفین کے لیے نہیں ہوگا۔

متعلقہ تحاریر