امریکہ: ڈکیتی کے دوران گیم کھیلنے والے پولیس اہلکار نوکری سے فارغ

ڈکیتی کے وقت دونوں اہلکار  اسٹور سے چند میٹر کے فاصلے پر موجود ویڈیو گیم کھیل رہے تھے۔

15اپریل 2017 کو امریکی ریاست لاس اینجلس  میں میسیز ڈپارٹمنٹ اسٹور پر ڈکیتی کی  اطلاعات ملیں اس دوران دونوں پولیس اہلکار لوئس لوزانو اور ایرِک مچِل گشت پر اسٹور سے تھوڑی ہی دور موجود تھے۔

امریکہ کی عدالتی دستاویزات سے معلوم ہوا ہے کہ 15 اپریل سنہ 2017 میں  امریکی ریاست لاس اینجلس میں میسیز ڈپارٹمنٹ اسٹور پر ڈکیتی کرکے فرار ہوتے ہوئے ڈکیتوں  کو گرفتار کرنے کےبجائے  دو پولیس اہلکار لوئس لوزانو اور ایرِک مچِل موبائل  فون پر گیم پوکیمون گو میں  مصروف رہے   جبکہ دونوں اہلکار  اسٹور سے چند میٹر کے فاصلے پر موجود تھے۔

یہ بھی پڑھیے

مایا اینجلو، امریکی سکے پر جگہ پانے والی پہلی سیاہ فام خاتون

امریکی صدر جوبائیڈن اور نائب صدر کے درمیان کشیدگی شدت اختیار کرگئی

عدالتی دستاویزات کے مطابق اس موقع پر ایک پولیس اہلکار کیپٹن ڈیون پورٹ نے بھی یہ ریڈیو کال سنی تھی۔ وہ اس ڈپارٹمنٹ سٹور اور قریب ہی گلی میں موجود پولیس کار کو دیکھ سکتے تھے۔ جب دونوں پولیس اہلکار ریڈیو کال کے بعد دکان پر نہیں گئے تو کیپٹن ڈیون پورٹ وہاں پہنچے اور قریب ہی گلی میں موجود پولیس کار کو ریورس ہو کر وہاں سے جاتے ہوئے دیکھا۔

پولیس  موبائل میں لگے ہوئے کیمرے سے اس بات کی تصدیق ہوئی کے دونوں اہلکار  مجرموں کو پکڑنے کے بجائے موبائل  فون پر گیم پوکیمون گو کے ایک کردار اسنورلکس کو ڈھونڈتے رہے،  ا سنورلکس نامی کردار بڑی مشکل سے ملتا ہے۔ دونوں پولیس اہلکاروں نے اس بات سے انکار کیا کہ وہ یہ گیم کھیل رہے تھے لیکن تحقیقات میں دونوں کے فرائض سے سنگین غفلت کا جرم ثابت ہونے پر دونوں کو نوکری سے برخواست کر دیا گیا۔

واضح رہے کہ  ‘پوکیمون گو’ ورچوئل ریئلٹی پر مبنی گیم  ہے جو اینڈرائڈ فون کے کیمرہ ایپ کی مدد سے اصل دنیا میں چھپے پوکیمون کے غیرحقیقی کردار ڈھونڈنے کی کوشش کرتے ہیں جنھیں مختلف جگہوں پر چھپایا جاتا ہے۔ ان کرداروں کو دنیا بھر کے اصلی مقامات میں جا کر پکڑنا ہوتا ہے۔ صحیح مقام پر پہنچتے ہی ایک ورچوئل کردار آپ کے موبائل فون میں ظاہر ہو جاتا ہے۔

Facebook Comments Box