سکھر چیمبر آف کامرس کی محنت رنگ لی آئی، حکام کسٹم کلیکٹریٹ کے قیام کا اعلان

اسسٹنٹ کلیکٹر طارق حسین کا کہنا ہے کسٹم کلیکٹریٹ کے قیام سے تمام کیسز کے فیصلے سکھر میں ممکن ہو سکیں گے۔

سکھر چیمبر آف کامرس کے کنوئینر عامر فاروقی کی محنتیں رنگ لے آئیں۔ بہت جلد سکھر اور اس سے متصل شہروں کے تاجروں کو بڑی خوش خبری ملے گی۔ سکھر میں کسٹم کلیکٹریٹ کا قیام ہو جائے گا۔ اسسٹنٹ کلیکٹر طارق حسین کا کہنا ہے اب کہیں جانے کی ضرورت نہیں تمام کسٹم کیسیز  سکھر میں ہی حل ہو جایا کرینگے۔

سکھر چیمبر آف کامرس کے صدر عامر خان غوری و کنوینئر کسٹم کمیٹی محمد عامر فاروقی و ممبران کی دعوت پر اسسٹنٹ کلیکٹر کسٹم سکھر طارق حسین اور عرفان منگی نے آغا طارق کے ہمراہ سکھر چیمبر آف کامرس میں کسٹم کلیکٹریٹ سکھر  کے قیام اور سکھر ڈرائی پورٹ کے سلسلے میں ایک اہم میٹنگ کی۔

یہ بھی پڑھیے

یوکرین پر روس کے حملے سے عالمی معیشت پر کیا اثرات مرتب ہوں گے؟

غیرقانونی ٹیکس ریفنڈ : شبر زیدی کو کلین چٹ کیوں اور کس نے دی؟

اس اجلاس میں  بانی سکھر چیمبر آف کامرس و سرپرست اعلی الحاج منور خان کے فرزند وقار خان کے بڑے بیٹے بلال خان نے بھی شرکت کی، انکے ساتھ سابقہ صدور محمد دین ، رفیق ڈوسانی ، عبدالفتح شیخ ، رضوان ملک، مجیدقریشی  و ایگزیکٹو کمیٹی کے میمبران سمیت کسٹم کمیٹی کے میمبران کی بڑی تعداد شامل تھیں۔

اس میٹنگ میں اسسٹنٹ کلیکٹر کسٹم  طارق حسین نے PSW ( پاکستان سنگل ونڈو ) سے متعلق درپیش مسائل کے حل اورPSW کے فوائد سے ایکسپورٹرز اور امپورٹرز کو مکمل آگاہی دی۔

اسسٹنٹ کلیکٹر طارق حسین کا مزید کہنا تھا کہ سکھر چیمبرآف کامرس کی طرف سے ڈیمانڈ آئی تھی۔ ایوان صنعت کے کنوینئر کسٹم کمیٹی محمد عامر فاروقی نے ہر فورم پر آواز بلند کی  کہ سکھر میں ہی کسٹم کلیکٹریٹ قائم ہونا چاہیے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس جدوجہد پر سکھرمیں کلیکٹریٹ کے قیام کے لیے ہنگامی بنیادوں پر محکماتی کاروائی شروع ہو چکی ہے  ۔بہت جلد چیمبر کے ممبران سمیت سکھر ڈویژن کے تاجروں کو خوش خبری مل جائیگی، اور بہت جلد سکھر کسٹم کلیکٹریٹ کا قیام  ہوجائے گا۔

سکھر میں کسٹم کلیکٹریٹ کے قیام کے سلسلے میں تمام تر کاروائی آخری مراحل میں داخل ہوچکیں ہیں۔ سکھر میں کلیکٹریٹ ہونے کے بعد کسٹم کے تمام کیسسز Adjudication (فیصلے) سکھر میں ہی ہو جایا کرینگے

طارق حسین اور عرفان منگی نے سکھر چیمبر میں بھی کسٹم سے وابسطہ شکایات کے ازالہ کے لیے کسٹم سیل قائم کرنےکی یقین دہانی کروائی تاکہ ایکسپورٹرز اور امپوٹرز کو Weboc اور PSW سے متعلق اگر کوئی شکایت یا کوئی دشواری کا سامنا ہو تو اسکو جلدازجلد حل کیا جاسکےگا۔

سکھر ڈرائی پورٹ کے قیام کے لیے صدر پاکستان کو سکھر کسٹم کی جانب سے کمنٹس دے چکے ہیں ہم بھی چاہتے ہیں کہ ڈرائی پورٹ سکھر ہونا چاہیے ۔ آخر میں صدر ایوان عامرخان غوری اور کنوینئر کسٹم کمیٹی محمد عامر فاروقی نے مہمانوں کو سندھ کی ثقافت اجرک اور ٹوپی کا تحفہ پیش کیا اور دونوں مہمانوں کو ایوان کی شیلڈز بھی دیں۔

متعلقہ تحاریر