سیپکو انتظامیہ کی نااہلی، شہر میں لگے بجلی کے پولز خستہ حالی کا شکار

علاقہ مکینوں سمیت مقامی دفتروں کے افسران کی نشاندہی کے باوجود سیپکو عملے کی جانب سے پولز کو مرمت کرنے کا کام شروع نہیں ہوسکا ہے۔

سکھر: سیپکو انتظامیہ کی نااہلی ، شہر کے مختلف مقامات پر لگے بجلی کے پولز خستہ حالی کا شکار ہوگئے، کوئی بھی بڑا حادثہ کسی بھی رونما ہوسکتا ہے۔ نشاندہی کے باوجود سیپکو حرکت میں نا آسکی، شہری حلقوں نے حکام بالا سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سکھر الیکڑک پاور سپلائی کمپنی (سیپکو) انتظامیہ و دیگر سب ڈویژن کی نااہلی اور مجرمانہ غفلت کے باعث سکھر شہر کے مختلف علاقوں میں نصب بجلی کے پولز خستہ حالی کا شکار ہوگئے۔

یہ بھی پڑھیے

سکھر کی ٹوٹی سڑکیں کھنڈرات کا منظرپیش کرنے لگیں

محکمہ ریلوے کی غفلت ، لینس ڈاﺅن برج خستہ حالی کا شکار

خستہ حالی کے باعث کئی پولوں کی تو بنیاد بھی اکھڑنے کی وجہ پولز لٹک چکے ہیں یہی صورتحال شہر کے مصروف ترین مقام عیدگاہ روڈ نزد پی ٹی سی ایل روڈ ، ڈی آئی آجی اولڈ آفس روڈ، مکی مسجد روڈ عقب ریلوئے ڈاک بنگلہ کےکنارے عرصہ کئی سالوں سے نصب بجلی کے پولز انتہائی خستہ حالی کے باعث سڑک کی جانب لٹک چکے ہیں۔

کئی پولز کی بنیادیں بھی خراب ہونے کی وجہ اکھڑ رہی ہیں جو کسی بھی بڑے حادثے کا سبب بن سکتے ہیں۔

علاقہ مکینوں سمیت مقامی دفتروں کے افسران کی نشاندہی کے باوجود سیپکو عملے کی جانب سے پولز کو مرمت کرنے کا کام شروع نہیں ہوسکا ہے۔

اس صورتحال پر شہری و سماجی حلقوں نے سیپکو انتظامیہ کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے حکام بالا سے نوٹس لیکر بجلی کے خراب پولز کی وجہ سے ہونے والے حادثے سے شہریوں کی زندگیاں محفوظ بنانے کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ تحاریر