ملک پہلے رشتے داریاں بعد میں، عاطف میاں کا حکومت کو مشورہ

پاکستانی نژاد امریکی ماہر اقتصادیات عاطف رحمان میاں نے اشارتاً اسحاق ڈار کو معاشی بربادی کا ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے حکومت کو مشورہ دیا کہ ملک کو پہلے جبکہ رشتے داروں کو بعد میں ترجیح دی جائے

پاکستانی نژاد امریکی ماہر اقتصادیات عاطف رحمان میاں نے موجودہ اتحادی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہےکہ ملک کو پہلے جبکہ رشتے داروں کو بعد میں ترجیح دی جائے ۔

بین الاقوامی شہرت یافتہ دنیا کے بہترین ماہر اقتصادیات  کی فہرست میں شامل عاطف میاں نے شہباز شریف حکومت پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ پہلے  ملک کو ترجیح  دی جائے ۔

یہ بھی پڑھیے

پاکستان اور چائنا کے درمیان دوستانہ تعلقات میں دراڑیں پڑگئیں

مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں ماہر معاشیات عاطف رحمان میاں نے شہباز شریف حکومت میں موجود ان کے ان کے رشتے دار وزراء پر کڑی تنقید کی ہے ۔

عاطف میاں نے اپنے پیغام میں حکومت کو مشورہ دیا ہے کہ پہلے پاکستان کی صورتحال دیکھی جائے اور ملک کو ترجیح دی جائے باقی رشتے داروں کو بعد میں ترجیح دینا ہے ۔

واضح رہے کہ ملک کی معاشی صورتحال کے پیش نظر عاطف میاں نے موجودہ حکومت اور ان کی پالیسیز کو طنز کا نشانہ بنایا جوکہ دن بدن گراوٹ کا شکار ہوتی جارہی ہے ۔

عاطف میاں کی ٹوئٹ میں رشتے داروں کو ترجیح دینے سے متعلق بات کا اشارہ یقیناً وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی جانب جاتا ہے کیونکہ وہ نواز شریف کے سمدھی ہیں۔

عاطف میاں نے ملک کی بدترین معاشی صورتحال کے پیش نظر غیر واضح انداز میں نوازشریف کے سمدھی  وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی معاشی پالیسیوں کو طنز کا نشانہ بنایا ہے ۔

خیال رہے کہ انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ (آئی ایم ایف ) نے پاکستانی نژاد امریکی شہری عاطف میاں دنیا کے 25 بہترین ماہر معاشیات کی فہرست میں شامل کر رکھا ہے ۔

سابق وزیراعظم عمران خان نے انہیں اقتصادی مشاورتی کونسل کا رکن  تعینات کیا تھا تاہم احمدی مذہب سے تعلق کی بنا انہیں ملک میں شدید مخالفت کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

یہ بھی پڑھیے

موڈیز نے پاکستان کی شرح نمو مزید سکڑنے کے خدشات ظاہر کردیئے

عمران خان کی جانب سے عاطف میاں کوای اے سی کارکن بنانے کمیٹی ارکان نے احتجاج کیا جبکہ کئی ارکان نے احتجاجاً کمیٹی سے استعفیٰ بھی دے دیا تھا ۔

یاد رہے اس سے قبل پاکستان مسلم لیگ نون کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر خزانہ نے بھی ملک کی موجودہ  معاشی صورتحال کی تمام تر ذمہ داری اسحاق ڈار پر عائد کی ہے ۔

نون لیگ کے رہنما اور سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ مجھے نکال دیتے مگر کسی کمپیٹنٹ بندے کو لے آتے تو معاشی صورتحال ایسی نہ ہوتی جیسی اب ہے۔

متعلقہ تحاریر