پارٹی یا شریف خاندان کا دباؤ؟ کیپٹن صفدر اپنے بیان سے مکرگئے

لیگی نائب صدر مریم نواز  کے شریک حیات  کیپٹن صفدر "اے آر وائے نیوز" کو دیئے اپنے انٹرویو سے مکر گئے اور سیاق و سباق سے ہٹ کر بیان چلانے پر ٹی وی چینل کے بائیکاٹ کا اعلان بھی کیا، فواد چوہدری نے کہا کہ بس بندہ اتنے دن ہی لان میں سو سکتا ہے، اس لیے یو ٹرن بنتا تھا

مسلم لیگ نون کی سینئر نائب صدر مریم نواز کے شریک حیات اور سابق رکن قومی اسمبلی کیپٹن ریٹائرڈ صفدر اعوان نجی ٹی وی چینل کو دیئے اپنے ہی  بیان سے مکر گئے ۔

مسلم لیگ نون کے سابق رکن اسمبلی اور مریم نواز کے شوہر کیپٹن ریٹائرڈ صفدر اعوان نجی وی ٹی  "اے آر وائے نیوز” کو دیئے گئے اپنے انٹرویو سے مکر گئے ۔

یہ بھی پڑھیے

کیپٹن صفدر کا عمران خان سے متعلق ذاتی نوعیت کے الزامات پر اظہار افسوس

کیپٹن ریٹائرڈ صفدر اعوان نے "اے آر وائے نیوز” کا بائیکاٹ کرتے ہوئے کہا کہ ٹی وی چینل نے چلتے پھرتے میرا انٹرویو لیا اور پھر سیاق و سباق سے ہٹ کر بیان کیا ۔

"اے آر وائے نیوز” سے منسلک صحافی   نعیم اشرف بٹ نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ کیپٹن صفدر نے اپنی مرضی سےانٹرویو اور پھر چینل کے خلاف محاذ کھول لیا ۔

نعیم اشرف نے کہا کہ کیپٹن صفدر شریف خاندان یا پارٹی کے دباؤ کے بعد "اے آر وائے نیوز” کو دیئے اپنے ہی انٹرویو سے مکر گئے اور چینل کے خلاف محاذ کھول لیا۔

کیپٹن صفدر کے مطابق "اے آر وائے نیوز” نے داتا دربار پر میرا اکیس منٹ کا انٹر ویو لیا تاہم پھر اس میں سے اپنے مرضی کے بیان سیاق و سباق سے ہٹ کر بیان کیے۔

انہوں نے اے آر وائے  نیوز پر الزام عائد کیا تھا کہ انہوں نے 21 منٹ کے انٹرویو کو6 منٹ تک محدود کرکے اپنے مطلب کی باتیں میڈیا پر چلائیں  ہیں۔

سابق وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے کیپٹن صفدر پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ بس اب بندہ اتنے دن ہی لان میں سو سکتا ہے، صفدر کا یو ٹرن بنتا تھا۔

واضح رہے کہ چند روز قبل کیپٹن ریٹائرڈ صفدر اعوان نے "اے آر وائے نیوز” کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں مسلم لیگ نون کے خلاف علم بغاوت بلند کیا تھا ۔

لیگی نائب صدرمریم نوازکے شوہرنے کہا تھا کہ ہم نے ووٹ کو عزت دو کے نعرے کو بےعزت کردیا۔ یہ نعرہ اس دن دفن ہواجب باجوہ کو ایکسٹینشن کا ووٹ دیا۔

کیپٹن ریٹائرڈ صفدر اعوان نے کہا تھا کہ مریم نواز مستقبل قریب میں وزیراعظم بنتی نظر نہیں آتی  ہیں۔انہوں نے شاہد خاقان عباسی کو عظیم انسان قرار دیا تھا ۔

انہوں نے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان سے متعلق ذاتی نوعیت  کے الزامات لگانے پر شرمندگی کا اظہار کرتے ہوئے  کہا تھا کہ اپنے بیانات پر رنجیدہ ہوں۔

متعلقہ تحاریر