وزیر خزانہ اسحاق ڈار کا عازمین حج کیلئے زرمبادلہ اور سہولیات فراہم کرنے کا عزم

وزیر خزانہ اسحاق ڈار کا کہنا ہے کہ سابق حکومت کے آئی ایم ایف سے معاہدوں کے باعث ہمارے ہاتھ بندھے ہوئے ہیں مگر عازمین حج کو مکمل سہولیات اور آسانیا ں فراہم کریں گے، عازمین کے لیے زرمبادلہ کے انتظامات کرلیے جائیں گے

وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے عازمین حج کو حکومت کی جانب سے مکمل تعاون اور سہولیات کی فراہمی کی یقین دہانی کرواتے ہوئے کہا ہے کہ حج ایک مقدس مذہبی فریضہ ہے ۔

اسحاق ڈارکی زیرصدارت حج پالیسی 2023 سے متعلق اجلاس ہوا جس میں وزیر برائے مذہبی امور مفتی عبدالشکور، معاون خصوصی اور سیکرٹریز  سمیت اعلیٰ افسران شریک ہوئے۔

یہ بھی پڑھیے

حج کی ادائیگی ، سعودی حکومت کا پاکستانی حاجیوں سے متعلق بڑا فیصلہ

وزیر خزانہ نے شرکاء اجلاس سے خطاب میں کہا کہ سابق حکومت کے آئی ایم ایف سے معاہدوں کے باعث ہمارے ہاتھ بندھے ہوئے ہیں مگر عازمین کو مکمل سہولیات فراہم کریں گے۔

اسحاق ڈار نےعازمین حج کو حکومت کی جانب سے مکمل تعاون کی یقین دہانی کرواتے ہوئے کہا کہ اللّٰہ کے مہمانوں کی آسانی اور سہولیات  کیلئے حکومت ہر ممکن اقدام کرے گی۔

وفاقی وزیر برائے مذہبی امور مفتی عبدالشکور نے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو زرمبادلہ کی کمی اور دیگر مسائل سے آگاہ کیا اور ان سے اس حوالے سے تعاون  طلب کیا ۔

وزیر خزانہ نے عازمین حج کیلئے زرمبادلہ کے انتظامات کا عندیہ دیتے ہوئے کہا کہ حج جیسے مذہبی تہوار کو کامیاب بنانے کے لیے عازمین کو زیادی سے زیادہ آسانی فراہم کی جائیں گی۔

اجلاس کے دوران شرکاء کو حکومت کی حج پالیسی 2023 کے حوالے سے آگاہی فراہم کی گئی۔ شرکاء کو بتایا گیا ہے کہ رواں سال 1 لاکھ 79 ہزار سے زائد پاکستانی حج ادا کریں گے ۔

ذرائع کے مطابق موجودہ ڈالر ریٹ کے حساب سے حج اخراجات کا تخمینہ11 سے 12 لاکھ روپے کے درمیان ہے۔سرکاری حج اسکیم  میں درخواست  وصولی 13 مارچ سے شروع ہوگی ۔

متعلقہ تحاریر