کراچی میں ٹریفک حادثے میں اٹارنی جنرل کے ڈرائیور جاں بحق

حادثے میں 2 پولیس اہلکاروں سمیت 3 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔

پاکستان کے صوبہ سندھ کے دارالحکومت کراچی کے علاقے ڈیفنس خیابانِ شہباز میں ٹریفک حادثے کے نتیجے میں اٹارنی جنرل آف پاکستان خالد جاوید کے ڈرائیور جاں بحق ہوگئے ہیں۔ حادثے میں 2 پولیس اہلکاروں سمیت 3 افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔

حادثے کی سی سی ٹی وی فوٹيج نیوز 360 نے حاصل کرلی ہے جس میں واضح طور پر دیکھا جاسکتا ہے کہ تیز رفتار کار بنگلے کے باہر لگے سکیورٹی گارڈ کے کیمپ میں جا گھسی ہے۔ ویڈیو میں نظر آنے والا بنگلہ اٹارنی جنرل آف پاکستان خالد جاوید کا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

جیا علی کاروباری شخصیت کے ساتھ رشتہ ازدواج میں منسلک

سینئر سپرنٹنڈنٹ پولیس (ایس ایس پی) جنوبی کراچی زبیر نذیر شیخ کے مطابق ٹریفک حادثے میں جاں بحق ہونے والے شخص اٹارنی جنرل آف پاکستان خالد جاوید کے ڈرائیور تھے جن کی شناخت لیاقت علی عرف فیضان کے نام سے ہوئی ہے۔ تیز رفتار گاڑی کے ڈرائیور سلطان بھی حادثے میں زخمی ہوئے ہیں لیکن وہ گاڑی کے مالک نہیں ہیں۔

ایس ایس پی زبیر نذیر شیخ کا کہنا ہے کہ حادثے میں زخمی ہونے والے دونوں پولیس اہلکاروں کو طبی امداد کے لیے قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا تھا جہاں ان کی حالت تشویشناک بتائی گئی ہے۔ زخمی اہلکاروں میں ہیڈ کانسٹیبل شہباز اور کانسٹیبل عرفان شامل ہیں۔

پولیس نے حادثے کے ذمہ دار گاڑی نمبر BAP469 کے ڈرائیور سلطان کو حراست میں لے لیا ہے جو خود بھی زخمی ہیں۔ پولیس کی جانب سے مزید تفتیش کی جارہی ہے۔

متعلقہ تحاریر