مولٹی فوم اور ڈائمنڈ سپریم فوم کے درمیان لفظی جنگ کا آغاز

ماسٹر مولٹی فوم کی جانب سے ڈائمنڈ سپریم فوم کے خلاف اخبار میں اشتہار چھپوا دیا گیا۔

پاکستان میں فوم بنانے والی دو بڑی کمپنیز کے درمیان ایک مرتبہ پھر لفظی جنگ کا آغاز ہوگیا ہے۔ ماسٹر مولٹی فوم نے ڈائمنڈ سپریم فوم پر چوری شدہ مہمات چلانے کے حوالے سے اخبار میں اشتہار چھپوا دیا۔

ماسٹر مولٹی فوم نے حریف کمپنی ڈائمنڈ سپریم فوم کے خلاف اخبار میں اشتہار چھپوا کر عدالتی احکامات کی یاد دہانی کرائی ہے۔ اشتہار میں مولٹی فوم کی ان تمام مہمات کا ذکر کیا گیا جو کہ ڈائمنڈ سپریم فوم کی جانب سے چوری کی گئیں تھیں اور ساتھ ہی سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے کا حوالہ بھی دیا گیا ہے۔ مولٹی فوم نے اشتہار میں وضاحت دی ہے کہ عدالتی حکم کے باوجود ڈائمنڈ سپریم فوم کی جانب سے چوری شدہ مہمات چلائی جارہی ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

ٹوئٹر صارف کو فیڈایکس کے عمر کا دلچسپ جواب موصول

ماسٹر مولٹی فوم اور ڈائمنڈ سپریم فوم کے درمیان قانونی جنگ کا آغاز 2019 میں ہوا جب ڈائمنڈ سپریم فوم نے اپنے ایک اشتہار میں مولٹی فوم کی مشہور پاپا جانی مہم کے الفاظ استعمال کیے۔ اس حوالے سے شہر میں متعدد بل بورڈز نصب کیے گئے تھے جن میں ماسٹرمولٹی فوم کا نام لیے بغیر شہریوں کو مولٹی فوم کا استعمال ترک کر کے ڈائمنڈ سپریم فوم استعمال کرنے کی تریب دی گئی تھی۔

صرف یہی نہیں بلکہ اداکارہ مہوش حیات اور علی ظفر کا ٹی وی پر ایک اشتہار بھی نشر ہوا تھا جس میں دبے الفاظ میں پاپا جانی مہم کا حوالہ دیا گیا تھا۔ اس اشتہار کے بعد مولٹی فوم نے عدالت سے رجوع کیا تھا۔

واضح رہے سال 2020 میں عدالت نے ڈائمنڈ سپریم فوم کو پاپا جانی سے ملتی جلتی بابا جانو مہم اور ننھی پری مہم سے مماثلت رکھتی منی فری مہم کو فوری طور پر روکنے کا حکم دیا تھا۔

متعلقہ تحاریر