اے آر وائی لاگونا پراپرٹی کا نیا اسکینڈل بننے جارہا ہے؟

خریداروں کو پروجیکٹ سے متعلق تفصیلات نہیں بتائی جارہی ہیں اور قیمتوں میں بھی غیر اعلانیہ اضافہ کیا جارہا ہے۔

کراچی میں اے آر وائی نیٹ ورک کی جانب سے لاگونا ہاؤسنگ پروجیکٹ خریداروں کی شکایات کے باعث بظاہر پراپرٹی کا نیا اسکینڈل بن رہا ہے۔

شہر قائد میں اے آر وائی نیٹ ورک کی لاگونا کو ایک جدید ترین ہاؤسنگ اسکیم کہا جارہا تھا۔ اے آر وائی کے صدر اور چیف ایگزیکٹیو آفیسر سلمان اقبال کا کہنا تھا کہ یہ جنوبی ایشیاء کا پہلا اور پاکستان کا سب سے بڑا پروجیکٹ ثابت ہوگا۔ ادھر سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی شکایات سے اے آر وائی لاگونا سب سے بڑا پروجیکٹ تو ثابت نہیں ہورہا لیکن پراپرٹی کا ایک نیا اسکینڈل ضرور بن رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

بحریہ ٹاؤن پر شرپسندوں کا حملہ، حکومت خاموش تماشائی

سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر اے آر وائی لاگونا سے متعلق کئی خریداروں کی جانب سے شکایات سامنے آئی ہیں۔ سوشل میڈیا صارفین کا کہنا ہے کہ کمپنی اس پروجیکٹ سے متعلق سچائی بیان نہیں کر رہی ہے۔ پہلے فیز میں کتنے ٹاورز بنیں گے؟ کُل کتنے فیز ہوں گے؟ اس منصوبے کو مکمل ہونے میں کتنا وقت لگے گا؟ اس حوالے سے کوئی تفصیلات نہیں بتائی جارہی ہیں۔

سید مبشر علی نامی سوشل میڈیا صارف نے لکھا کہ انہیں اے آر وائی لاگونا کی جانب سے فون کال آئی تھی جس میں انہیں دو کمروں کے یونٹ کی ادائیگی کرنے کے لیے کہا گیا تھا۔ کمپنی نے یہ نہیں بتایا کہ ان کا یونٹ کس ٹاور میں ہے اس لیے انہوں نے ادائیگی بھی نہیں کی۔

آباد شاہ نامی خریدار نے لکھا کہ انہوں نے 55 لاکھ روپے میں اے آر وائی لاگونا میں 2 کمروں کا اپارٹمنٹ بُک کروایا تھا۔ اے آر وائی نے بعد میں اس کی قیمت بڑھا کر 68 لاکھ، پھر اس کے بعد 87 سے 90 لاکھ روپے تک کردی۔ یہ فراڈ بالکل ناقابل قبول ہے۔

سوشل میڈیا پر سوال کیا جارہا ہے کہ اس منصوبے کی تعمیر کا کام ابھی شروع تک نہیں کیا گیا ہے تو کیا منصوبہ سازوں نے پہلے ہی قیمتوں میں تبدیلیوں کے بارے میں نہیں سوچا تھا؟ اشتہار دینے سے قبل اپارٹمنٹس کی آخری قیمت کا تعین کیوں نہیں کیا گیا تھا؟

سوشل میڈیا صارفین نے اے آر وائی لاگونا کو فراڈ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ منصوبہ ابتداء سے ہی مشکوک ہے۔ کمپنی کہہ رہی ہے کہ تعمیراتی کام میں تبدیلی کی وجہ سے قیمتیں بڑھ گئی ہیں۔ اب اس کی کیا گارنٹی ہے کہ آئندہ 5 سالوں میں تعمیراتی لاگت نہیں بڑھے گی؟

متعلقہ تحاریر