کرونا کے خلاف کامیاب حکمت عملی کے باعث کیسز ہزار سے بھی کم

پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کرونا وائرس کے صرف 838 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔

نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر (این سی او سی) کی کرونا وائرس کے خلاف حکمت عملی کامیاب ثابت ہورہی ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کرونا وائرس کے صرف 838 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جو کہ گزشتہ کئی ماہ کے دوران کم ترین تعداد ہے۔ این سی او سی کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کرونا وائرس سے متاثرہ مزید 59 افراد انتقال کرگئے ہیں۔

این سی او سی کے جاری کردہ تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق ملک بھر میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 35 ہزار 39 نئے ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے 838 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ اسی دوران کرونا سے 59 افراد جاں بحق ہوئے ہیں جس کے بعد وباء سے انتقال کرنے والے افراد کی تعداد 21 ہزار 782 ہوگئی ہے۔

یہ بھی پڑھیے

اے آر وائی لاگونا پراپرٹی کا نیا اسکینڈل بننے جارہا ہے؟

کرونا حکمت عملی
ncoc.gov.pk/

این سی او سی کے مطابق ملک بھر میں اب تک ایک کروڑ 38 لاکھ 92 ہزار 289 افراد کے ٹیسٹ کیے جاچکے ہیں۔ 8 لاکھ 80 ہزار 316 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ 2 ہزار 611 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔

کیسز کی تعداد

این سی او سی کے مطابق پنجاب میں 3 لاکھ 44 ہزار 196، سندھ میں 3 لاکھ 28 ہزار 663، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 36 ہزار 205، بلوچستان میں 26 ہزار 275، گلگت بلتستان میں 5 ہزار 727، اسلام آباد میں 82 ہزار 170 جبکہ آزاد کشمیر میں 19 ہزار 791 کیسز رپورٹ ہوئے۔

اموات کی تعداد

نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر کے مطابق اب تک پنجاب میں 10 ہزار 548، سندھ میں 5 ہزار 256، خیبر پختونخوا میں 4 ہزار 234، اسلام آباد میں 773، بلوچستان میں 294، گلگت بلتستان میں 108 اور آزاد کشمیر میں 569 مریض کرونا وائرس کی وجہ سے جاں بحق ہوچکے ہیں۔

این سی او سی کا اجلاس اور اہم فیصلے

رواں سال 19 مئی کو وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کی زیرصدارت این سی او سی کا اہم اجلاس ہوا تھا جس میں ملک بھر میں کرونا کیسز کا تفصیلی جائزہ لیا گیا تھا۔ اجلاس میں 24 مئی سے 5 فیصد سے کم مثبت شرح کے حامل اضلاع میں تعلیمی اداروں سمیت دیگر شعبوں کو مرحلہ وار کھولنے کے احکامات جاری کیے گئے تھے۔

جس کے بعد 23 مئی کو این سی او سی کے اجلاس کے بعد وفاقی وزیر اسد عمر نے ملک بھر میں مرحلہ وار اسکول کھولنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ یکم جون سے نویں اور دسویں جماعت کی کلاسز کا تدریسی عمل شروع کردیا جائے گا تاہم عملے کے وہ افراد جن کی عمر 18 سال سے زیادہ ہوگی ان کی ویکسینیشن کا عمل جلد از جلد مکمل کیا جائے گا۔

کرونا حکمت عملی

سندھ حکومت کا بڑا فیصلہ

گزشتہ روز سندھ حکومت نے صوبے بھر میں کرونا کیسز میں کمی کے بعد چھٹی سے آٹھویں جماعت تک اسکولز 50 فیصد حاضری کے ساتھ کھولنے کی اجازت دے دی ہے۔

گزشتہ روز صوبائی وزیر تعلیم سعید غنی نے سندھ کرونا ٹاسک فورس کے اجلاس کے بعد منگل سے اسکول کھولنے کے اعلان سے متعلق آگاہ کیا تھا۔

متعلقہ تحاریر