کراچی میں حادثات، ٹریفک پولیس رپورٹ نے خطرے کی گھنٹی بجادی

رواں سال کے ابتدائی 6 ماہ میں 139 ٹریفک حادثات میں 119 افراد جاں بحق ہوئے۔

کراچی میں ٹریفک حادثات میں روز بہ روز اضافے اور ٹریفک پولیس کی تازہ رپورٹ نے خطرے کی گھنٹی بجادی ہے۔ ٹریفک پولیس اہلکاروں کے سڑکوں پر موجود ہونے کے باوجود کراچی میں حادثات میں کمی آنے کی بجائے ان میں حیرت انگیز حد تک اضافہ ہورہا ہے۔

کراچی کی سڑکوں پر دوڑتی بے ہنگم ٹریفک تیزی سے انسانی زندگیاں نگلنے لگی ہے۔ ناتجربہ کار ڈرائیور حضرات کا گاڑیاں دوڑانا یا ہیوی ٹریفک کا دن کے اوقات میں سڑکوں پر گھومتے رہنا حادثات کی بڑی وجہ قرار دیا جارہا ہے۔ ٹریفک پولیس کی جانب سے سڑکوں پر رونما ہونے والے ٹریفک حادثات کی رپورٹ جاری کی گئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق رواں سال یکم جنوری سے 24 جون تک شہر کی مختلف سڑکوں پر 139 خطرناک ٹریفک حادثات رونما ہوئے، جن کے نتیجے میں 119 افراد لقمہ اجل بنے جبکہ 136 افراد شدید زخمی ہوئے۔

کراچی حادثات رپورٹ

یہ بھی پڑھیے

پیپلز پارٹی کے گڑھ میں سڑکوں کی ابتر حالت

اعداد و شمار کے مطابق جون 2020 تک 92 ٹریفک حادثات رونما  ہوئے تھے جن میں ہلاکتوں کی تعداد 83 تھی۔ گزشتہ سال کی نسبت رواں سال ٹریفک حادثات سے ہلاکتوں کی شرح میں 43 فیصد جبکہ شدید زخمی افراد کی شرح میں 109 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

کراچی کا ضلع غربی ٹریفک حادثات کے حوالے سے حساس ترین اور سر فہرست علاقہ ہے جہاں گزشتہ اور رواں سال خطرناک ٹریفک حادثات کی مجموعی تعداد 100 تک جا پہنچی ہے۔ رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ جاں بحق ہونے والوں میں زیادہ تر تعداد موٹر سائیکل سواروں کی تھی۔ رواں برس 84 جبکہ گزشتہ برس 53 موٹر سائیکل سواروں کی جان گئی تھی۔ سال 2021 کے پہلے 6 ماہ کے دوران واٹر ٹینکر، ڈمپر اور ٹرک کی زد میں آکر بھی 56 افراد زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔

متعلقہ تحاریر