عامر لیاقت قومی سلامتی کے اجلاس میں نہ بلائے جانے پر ناراض

عامر لیاقت تحریک انصاف کے ایک ایسے رہنما ہیں جو پل میں تولہ پل میں ماشہ ہیں۔

معروف میزبان عامر لیاقت حسین سوشل میڈیا پر اپنے ذومعنی جملوں کے باعث بےحد مقبول ہیں۔ اس مرتبہ قومی سلامتی کونسل کے اجلاس میں نہ بلائے جانے پر عامر لیاقت تھوڑے ناراض نظر آئے اور سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بند الفاظ میں وزیراعظم عمران خان کو مخاطب کردیا۔

پارلیمنٹ ہاؤس میں قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ، ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید اور ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے شرکت کی۔ اپوزیشن لیڈر شہباز شریف سمیت دیگر سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والی اہم شخصیات بھی شریک ہوئیں۔

قومی سلامتی کونسل کے اس اہم ترین اجلاس میں نہ بلائے جانے پر رہنما تحریک انصاف کچھ ناراض دکھائی دیئے۔ ٹوئٹر پوسٹ میں عامر لیاقت نے لکھا کہ قومی سلامتی کونسل کے اجلاس میں کون شریک ہوا کون نہیں؟ بھئی ہمیں کیا؟ ہمیں تھوڑی بلایا تھا جو ہم تبصرے کریں جو شریک ہوا وہ شریک ہے جو نہیں ہوا وہ شریک نہیں! قصہ ختم

یہ بھی پڑھیے

عامر لیاقت کی طوبیٰ عامر سے راہیں جدا؟

یہاں یہ بات اہم ہے کہ اس اجلاس میں وزیر اعظم عمران خان نے شرکت نہیں کی اور عامر لیاقت کا اشارہ شاید انہی کی طرف تھا۔ عامر لیاقت ایک مرتبہ پھر کچھ بھی نہ کہا اور کہہ بھی گئے کی پالیسی پر پورا اترے جوکہ ان کا خاصہ ہے۔

عامر لیاقت تحریک انصاف کے ایک ایسے رہنما ہیں جو پل میں تولہ پل میں ماشہ ہیں۔ کبھی تو عامر لیاقت وزیر اعظم عمران خان کے اہم فیصلوں کی مخالفت میں آواز بلند کرتے ہیں تو کبھی وہ اسمبلی فلور پر وزیراعظم کے لیے خصوصی اشعار پڑھتے نظر آتے ہیں۔

واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان کو اعتماد کا ووٹ ملنے پر عامر لیاقت نے قومی اسمبلی میں نعت پیش کی تھی اور نعت کے آخر میں وزیراعظم کے لیے اشعار بھی پڑھے تھے۔

متعلقہ تحاریر