سکھر کی غیرقانونی مویشی منڈیوں میں خریداروں کا رش

عید قربان قریب آنے کے باوجود انتظامیہ نے مویشی منڈی لگانے کا اعلان نہیں کیا۔

عیدالاضحیٰ قریب آتے ہی ملک بھر میں مویشی منڈیاں سج گئی ہیں لیکن انتظامیہ کی لاپرواہی سے سکھر میں تاحال مویشی منڈی کی نیلامی نہیں ہوسکی جس کے باعث مختلف علاقوں میں غیرقانونی منڈیاں قائم کردی گئی ہیں جہاں خریداروں کا رش امڈ آیا ہے۔

ہر سال عیدالاضحیٰ کے موقع پر سکھر انتظامیہ کی طرف سے مویشی منڈی لگانے کی نیلامی کی جاتی ہے لیکن اس مرتبہ عید قربان قریب آنے کے باوجود انتظامیہ نے مویشی منڈی لگانے کا اعلان نہیں کیا جس سے لوگوں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

انتظامیہ کی نااہلی اور لاپرواہی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے شہر اور گرد و نواح میں مویشی مالکان نے عارضی منڈیاں قائم کردی ہیں۔ جہاں قربانی کے مختلف نسل کے جانور لائے جارہے ہیں۔ جانوروں کی خریداری کے انتظار میں بیٹھے عوام نے بھی ان مویشی منڈیوں کا رخ کرلیا ہے۔ ان منڈیوں میں بیوپاریوں اور خریداروں میں بھاﺅ تاﺅ کا سلسلہ جاری ہے۔

یہ بھی پڑھیے

کراچی کی مویشی منڈی میں بیوپاریوں کے درمیان سخت مقابلہ

سکھر شہر کی مرکزی شاہراہوں اور تجارتی مراکز کے سامنے غیرقانونی مویشی منڈیاں قائم ہونے سے شہریوں اور تاجروں کو پریشانی کا سامنا ہے جبکہ ٹریفک کی روانی بھی متاثر ہورہی ہے۔ شہریوں اور تاجروں کا کہنا ہے کہ غیرقانونی مویشی منڈیوں کے قیام سے شہر میں امن امان کی صورتحال بھی خراب ہو سکتی ہے۔ شہریوں و سماجی حلقوں نے مویشی منڈیوں کو شہر سے باہر منتقل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

Facebook Comments Box