مرتضیٰ وہاب ایڈمنسٹریٹر نہیں مشیر بلدیات سندھ ہوں گے

ذرائع کا کہنا ہے پیپلز پارٹی کے آپسی اختلافات کی وجہ سے مرتضیٰ وہاب کی بطور ایڈمنسٹریٹر تعیناتی التواء کا شکار ہو گئی تھی۔

سندھ حکومت نے مشیر قانون مرتضیٰ وہاب کو ایڈمنسٹریٹر کراچی تعینات کرنے کی بجائے مشیر بلدیات کراچی بنانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے مرتضیٰ وہاب بطور ایڈمنسٹریٹر کراچی کی مخالفت کی تھی۔

نیوز 360 کے ذرائع کے مطابق مشیر قانون سندھ مرتضیٰ وہاب کے بطور ایڈمنسٹریٹر کراچی تعینات کرنے کے اعلان کے بعد پیپلز پارٹی کے اندر کئی گروپس بننا شروع ہو گئے تھے، جس کی وجہ سے کراچی سمیت سارے صوبے میں ایڈمنسٹریٹرز کا معاملہ حل نہیں ہورہا تھا۔

یہ بھی پڑھیے

گھریلو تشدد اور زیادتی کے واقعات، انسانی حقوق کہاں ہیں؟

ذرائع کے مطابق مرتضی وہاب کو ایڈمنسٹریٹر بننے پر دوسرے شہروں کے پپلز پارٹی رہناؤں نے بھی اپنے اپنے اضلاع میں ایڈمنسٹریٹری مانگ لی۔ پارٹی ذرائع کے مطابق پارٹی میں ایڈمنسٹریٹر کو لے کے کئی گروپس سامنے آگئے تھے، مرتضی وہاب کی رائے ہموار کرنے کو کوششیں تیز کردی گئی تھیں۔

ذرائع کے مطابق حکومت سندھ کی جانب سے ایڈمنسٹریٹر کے مسائل حل کرنے کے بجائے شہر کے چاروں اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز کو تبدیل کردیا گیا۔ ذرائع کے مطابق تجربےکار افسران تعینات کئے جارہے ہیں۔

سندھ حکومت کی جانب سے صوبے میں بلدیاتی انتخابات کرانے کی بجائے ایڈمنسٹریٹر لانے کے فیصلے کو حزب اختلاف کی جماعتوں خصوصاً تحریک انصاف اور ایم کیو ایم نے تسلیم کرنے سے انکار کردیا تھا۔

دوسری جانب پی ٹی آئی کی جانب سے بھی بلدیاتی الیکشن کرانے کے لئے سندھ ہائی کورٹ میں درخواست دائر کردی گئی ہے۔

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے مرتضی وہاب کو ایڈمنسٹریٹر بنانے کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ صوبے میں کام کرنے بجائے نئے نئے تجربے کئے جارہے ہیں۔ پپلزپارٹی کی کاردگی سب کے سامنے ہے۔

چند روز قبل چھڑیا گھر کراچی کے باہر وزیر بلدیات سندھ سید ناصر حسین شاہ نے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے نیوز 360 کو بتایا تھا کہ اب سے کراچی کے معاملات مرتضی وہاب کے حوالے ہیں، انہیں نیا ایڈمنسریٹر بنانے کی تیاری مکمل کرلی گئی ہے، جس کا اعلان جلد کردیا جائے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر بلدیات سندھ کے اعلان کے بعد صوبے کے مختلف شہروں کے رہنماؤں اور کارکنان نے اپنے اپنے ضلع میں ایڈمنسٹریٹری مانگ لی تھی جس کی وجہ سے مرتضیٰ وہاب کی تعیناتی التوا کا شکار ہوگئی تھی۔

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ اپنے تعینات کے اعلان کے بعد مرتضیٰ وہاب نے چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری سے بلاول ہاؤس میں ملاقات کی تھی اور انہیں شہر کی صورتحال پر بریفنگ دی تھی۔ بلاول بھٹو زرداری نے نامزد ایڈمنسٹریٹر کو ہدایت کرتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان پیپلز پارٹی عوام کی جماعت ہے، شہریوں کے مسائل ان کی دہلیز پر حل کئے جائیں۔

Facebook Comments Box