ملزم ظاہر جعفر شیطان کا پجاری؟

میشی خان نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ ملزم ظاہر جعفر شیطان کا پجاری ہوسکتا ہے

پاکستانی اداکارہ میشی خان نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری ویڈیو پیغام میں خدشہ ظاہر کیا کہ نور مقدم قتل کیس میں گرفتار ملزم ظاہر جعفر شیطان کا پجاری ہوسکتا ہے۔

نور مقدم کے بےرحمی سے کیے گئے قتل نے کئی سوالات اٹھادیئے ہیں۔ ملزم ظاہر جعفر کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ اس کا ذہنی توازن ٹھیک نہیں، ایسا ہو بھی سکتا ہے لیکن اداکارہ میشی خان نے اس سلسلے میں ایک نئی بات کہہ دی۔

میشی خان نے ٹوئٹر پر ایک ویڈیو پیغام جاری کیا جس میں انہوں نے خدشہ ظاہر کیا کہ ملزم ظاہر جعفر شیطان کا پجاری ہوسکتا ہے کیونکہ شیطان کی پرستش کرنے والی خفیہ تنظیم الیومناٹی میں شمولیت کے لیے انسان کو کوئی ایک ایسا کام کرنا پڑتا ہے جوکہ نہایت بھیانک ہو۔ ایسے اقدام سے دراصل شیطان کو بلی چڑھائی جاتی ہے۔ میشی خان نے مزید کہا کہ کسی کا اتنی بے رحمی سے قتل کرنا اور پھر اس کی ویڈیو بنانا یہ کوئی عام بات نہیں ہے، یہ کام کسی خاص مقصد کے لیے کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

نور مقدم قتل کیس، اخبارات نے صحافتی اقدار کی دھجیاں اڑا دیں

میشی خان کے اس بیان سے متعدد سوشل میڈیا صارفین بھی متفق ہیں۔

ایک خاتون صارف نے میشی خان کی بات سے اتفاق کرتے ہوئے لکھا کہ یہ سچ ہے تبھی ظاہر جعفر نے سورج ڈھلنے کا انتظار کیا۔

واضح رہے کہ 20 جولائی کو اسلام آباد کی پولیس نے ملزم ظاہر جعفر کو اس کے گھر سے گرفتار کیا تھا۔ نور مقدم کے والدین کا کہنا ہے کہ ملزم نے ان کی بیٹی کو تیز دھار آلے سے قتل کرکے سر جسم سے الگ کردیا تھا۔

Facebook Comments Box