کراچی میں پیٹرول پمپس لوٹنے والے ڈاکو چھلاوا بن گئے

کورنگی صنعتی ایریا میں ڈاکوؤں نے پیٹرول پمپ مالکان کی ناک میں دم کردیا ہے۔

کراچی میں 5 روز کے دوران 4 پیٹرول پمپس لوٹنے والے 2 ڈاکو چھلاوا بن گئے۔ دیدہ دلیری سے گولیاں چلانے والے تاحال پولیس کی پہنچ سے دور ہیں۔

لاک ڈاؤن کے باوجود کراچی میں لوٹ مار کے واقعات میں کمی نہیں آرہی۔ پولیس کا ایکشن شہر میں ناکے لگانے اور دکانیں بند کرانے تک محدود ہوگیا ہے۔ بے لگام لٹیروں نے لاک ڈاؤن سے مستثنیٰ کاروبار کو ہدف بنالیا۔ کراچی کے علاقے کورنگی کے پیٹرول پمپس پر موٹر سائیکل پر آنے والے 2 ڈاکو محض چند سیکنڈز میں اسلحے کے زور پر ہزاروں روپے نقدی چھین کر فرار ہوجاتے ہیں۔ یہ دونوں ڈاکو پولیس کے لیے چھلاوا اور پیٹرول پمپ مالکان کے لیے خوف کی علامت بن گئے ہیں۔

پولیس نے تصدیق کی ہے کہ یہ دونوں ملزم محض 5 روز کے دوران لانڈھی کورنگی کے صنعتی علاقے میں 4 پیٹرول پمپس لوٹ چکے ہیں۔ اس دوران ان ڈاکوؤں نے نہ صرف ہزاروں روپے نقدی لوٹی بلکہ ایک واردات میں دھڑلے سے پیٹرول پمپ کی سیکیورٹی پر مامور سیکیورٹی گارڈ کی رائفل بھی لے کر چلتے بنے۔ دیگر 2 وارداتوں میں ملزمان نے مزاحمت کے خدشے کے پیش نظر اندھا دھند گولیاں بھی چلائیں جس سے دو افراد زخمی ہوئے۔

یہ بھی پڑھیے

کیا ویشا ابوبکر اگلی نور مقدم ہو سکتی ہیں؟

ملزمان نے 28 جولائی کی شب ویٹا چورنگی کے قریب پیٹرول پمپ پر واردات کی اور سیکیورٹی گارڈ کا اسلحہ ونقدی چھین کر فرار ہوگئے۔ ذرائع کے مطابق اس سے قبل دونوں نے کورنگی ناصر جمپ کے قریب شیل کے پیٹرول پمپ پر بھی واردات کی تھی۔ ملزمان نے تیسری واردات 2 اگست کی شب مرتضیٰ چورنگی کے قریب پی ایس او پمپ پر کی، جس میں ملزمان نے کیشیئر سے 25 ہزار روپے سے زیادہ نقدی لوٹنے کے بعد دو گولیاں بھی فائر کیں، فائرنگ کے بعد پیٹرول پمپ پر بھگدڑ مچ گئی۔ بے خوف ہوکر واردات کرنے اور گولیاں چلانے والے ان ڈاکوؤں نے مبینہ طور پر کچھ ہی دیر بعد مانسہرہ کالونی لانڈھی میں بھی ایک پیٹرول پمپ لوٹا اور فرار ہوگئے۔

پیٹرول پمپس پر لوٹ مار کرنے والے ان 2 ڈاکؤوں کے کرتوت ہی نہیں بلکہ چہرے بھی 2 سی سی ٹی وی فوٹیجز میں واضح دیکھے جاسکتے ہیں مگر پولیس تاحال ان چھلاوا بنے ڈاکوؤں تک پہنچنے میں ناکام ہے۔ وارداتوں کی تصدیق کرنے والے پولیس حکام کہتے ہیں کہ ملزموں کو جلد گرفتار کرلیا جائے گا۔

Facebook Comments Box