مرید عباس قتل کیس کا فیصلہ 30 ستمبر کو سنایا جائے گا

کیس کا فیصلہ 30 ستمبر کو سنایا جائے گا۔

اینکر مرید عباس قتل کیس کا فیصلہ  اگلے  ماہ  کی  30 تاریخ  کو  سنایا  جائے گا۔ نیوز360   کے ذرائع  کے  مطابق ملزم  عاطف زمان  کے  ورثا  نے  مقتول  کی  اہلیہ زارا عباس سے  رابطہ  کرکے کیس  واپس  لینے کا مطالبہ  کیا جس  سے انہوں نے انکار  کردیا۔

زارا  عباس  نے  سماجی  رابطوں  کی  ویب  سائٹ  ٹوئٹر  پر  خدا  کا  شکر  ادا  کرتے  ہوئے  لکھا  کہ  آخرکار  عدالت نے ان  کے  شوہر  کے  کیس کا ٹرائل جلد مکمل کرنے کے لیے شیڈول مقرر کردیا  ہے۔ مرید عباس قتل کیس کا فیصلہ 30 ستمبر  کو  سنایا  جائے گا۔

یہ  بھی  پڑھیے

لیگی خاندان کی لندن ترجیح پر سوالات اٹھنے لگے

تفصیلات  کے  مطابق ملزم  کے  خلاف  ثبوت  پیش کرنے کے  لیے  30 اگست سے 14 ستمبر کی تاریخ مقرر کی گئی ہے۔ ملزم عاطف زمان کا بیان 18 ستمبر کو  ریکارڈ کیا جائے  گا جبکہ حتمی دلائل 22 ستمبر کو طلب کيے گئے ہيں۔

نیوز360 کے ذرائع  کے  مطابق ملزم  عاطف زمان  کے  ورثا  نے  مقتول  کی  اہلیہ زارا عباس سے  رابطہ  کرکے دیت  کی  بات  کی  اور کیس کے  فیصلے  سے  پہلے  کیس  واپس  لینے کا مطالبہ  کیا تاہم  زارا عباس نے ان  کا  مطالبہ  ماننے  سے  صاف  انکار  کردیا۔

دوسری  جانب  سماجی کارکن اور وکیل جبران ناصر  نے  اپنی  ٹوئٹ  میں  لکھا  کہ دو  سال  کی  جدوجہد  کے  بعد  آخرکار  فیصلے کی  گھڑی  آنے  والی  ہے۔  اس  موقعے  پر  انہوں  نے  مرید  عباس  کی  اہلیہ  زارا  عباس  کو  مبارکباد  دی۔

واضح رہے کہ ملزم عاطف زمان پر  الزام  ہے  کہ  انہوں  نے رقم کے تنازعے پر 9 جولائی 2019  کو فائرنگ کرکے مريد  عباس  اور  ان  کے  دوست کو قتل کرديا تھا۔

Facebook Comments Box