سندھ میں مچھلی کی جدید طریقے سے پیداوار

عبدالباری پتافی کے مطابق جدید فارمنگ کا مقصد مچھلی کے کاروبار کو نچلی سطح پر منتقل کرنا ہے۔

صوبائی وزیر لائیو اسٹاک و فشریز سندھ انجینئر عبدالباری پتافی فش ہیچری منڈو دیرو میں بائیوفلاک اقوا کلچر یونٹ اور بیک یارڈ فش ہیچری کا افتتاح کردیا ہے۔

سندھ حکومت نے لائیو اسٹاک اور فشریز کی جانب سے ہیچری کی مدد سے مچھلی کے کاروبار کو بڑھانے کے لیے جدید ٹیکنالوجی کے تحت نچلی سطح تک وسیع اور یونیورسٹیز میں تحقیق کرنے والے طلبہ و طالبات کو بہتر ماحول فراہم کرنے کا فیصلہ ہے۔

یہ بھی پڑھیے

سندھ حکومت کا بوٹ بیسن پر فوڈ اسٹریٹ بنانے کا فیصلہ

مصنوعی طریقہ کار اپنا کر فش فارمنگ کے لیے نایاب نسل کا بیج سکھر، گھوٹکی، بدین، سانگھڑ کے فش ہیچری سینٹرز میں چھوٹے تالابوں میں رکھ کر ہارمونز کے استعمال سے نر مچھلی کی پیدا کی جائے گی۔

افتتاح کے موقع پر صوبائی وزیر لائیو اسٹاک و فشریز انجینئر عبدالباری پتافی نے مچھلی کے بیج سے مصنوعی طریقے سے تیار ہونے والے نظام کا تفصیل سے جائزہ لیا اور فش ہیچریز میں پودے بھی لگائے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے صوبائی وزیر کا  کہنا تھا کہ سندھ حکومت کی لائیواسٹاک و فشریز اولین ترجیح ہے کہ مچھلی کے کاروبار کو جدید ٹیکنالوجی کے تحت سرکاری اور غیر سرکاری سطح پر فروغ دے کر بہتر آمدن حاصل کی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ فش فارمنگ کا نظام پرانا تھا جس میں تبدیلی لاکر جدید نظام نافذ کرکے کم وقت میں زیادہ پیداوار حاصل کرنے کے لیے پائلٹ پروجیکٹ کی منصوبہ بندی کی گئی ہے جس سے ہر فرد اس کاروبار کا حصہ بن سکتا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ اس پائلٹ پروجیکٹ کے توسط سے مصنوعی طریقے سے بیج کی بریڈنگ کی جارہی ہے جس میں کامپیکٹ سسٹم کو بھی شامل کیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سکھر ،گھوٹکی سمیت دیگر اضلاع میں قائم ہیچریز میں تحقیقی عمل کو مزید تیز کیا جائے گا تاکہ اس سے زیادہ فوائد حاصل ہوں۔

انہوں نے سندھ کے باسیوں اور کاروباری حضرات کو مشورہ دیا کہ وہ فش فارمنگ جیسے کاروبار کے لیے آگے آئیں سندھ حکومت اور فشریز محکمہ اس سلسلے میں بھرپور مدد، مشاورت اور تعاون کرے گا ۔

اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل فش ہیچری میر اللہ داد ٹالپور نے صوبائی وزیر کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ بائیو فلاک اقوا کلچر یونٹ جدید ٹیکنالوجی کے تحت کام کریں گے جہاں چھوٹے تالابوں میں اعلیٰ نسل کی مچھلیوں کی افزائش کی جائے گی بعد خاص وزن ہونے پر ان کو بڑے تالابوں میں منتقل کیا جائے گا ۔

انہوں نے کہا کہ چھوٹے تالابوں میں فارمنگ کا جدید نظام اپنایا جاتا ہے اور میڈیکل سائنس کے مطابق انسانی جان کو مطلوبہ وٹامن کی فراہمی اور بیماریوں سے بچاؤ کے لیے مچھلی موثر ثابت ہوتی ہے جبکہ مختلف ریسٹورنٹ اور فاسٹ فوڈ میں بھی مچھلی کا استعمال ہوتا ہے۔

Facebook Comments Box