وزیراعظم آج اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے ورچوئل خطاب کریں گے

وزیراعظم عمران خان کی جانب سے ممکنہ طور پر مسئلہ کشمیر اور افغانستان کی موجودہ صورتحال پر اظہار خیال کا امکان ہے۔

وزیراعظم عمران خان آج رات اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کریں گے۔ نیویارک میں جاری جنرل اسمبلی کے اجلاس سے وزیراعظم ورچوئل خطاب کریں گے۔

وزیراعظم کی جانب سے ممکنہ طور پر مسئلہ کشمیر اور افغانستان کی موجودہ صورتحال پر اظہار خیال کا امکان ہے۔

یہ بھی پڑھیے

پاکستان کی نظریں وسط ایشیائی ریاستوں پر مرکوز

امسال وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اقوام متحدہ کے اجلاس میں پاکستان کی نمائندگی کررہے ہیں۔ گزشتہ روز ان کی اپنے امریکی ہم منصب انتھونی بلنکز سے بھی ملاقات ہوئی ہے۔

جنرل اسمبلی سیشن سے روسی صدر ولادیمیر پیوٹن اور ترک صدر رجب طیب اردگان خطاب کرچکے ہیں۔ دونوں سربراہانِ مملکت نے افغانستان میں کثیرالجہتی حکومت نہ بننے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

یاد رہے کہ پچھلے برس وزیراعظم عمران خان نے جنرل اسمبلی اجلاس میں شرکت کی تھی لیکن بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نہیں آئے تھے۔

اس سال وزیراعظم ورچوئل خطاب کریں گے جبکہ نریندر مودی اجلاس میں شریک ہونے کے لیے امریکا پہنچ چکے ہیں۔

2020 میں عمران خان نے اپنی تقریر کے دوران مغربی ممالک میں تیزی سے بڑھتے ہوئے اسلاموفوبیا سے متعلق بات کی تھی اور کشمیر میں جاری بھارتی مظالم کو بھی بےنقاب کرکے عالمی برادری سے اس کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا تھا۔

Facebook Comments Box