نواز شریف سمیت ہائی پروفائل کیسز میں مطلوب مجرموں کی واپسی کےلیے حکومت سرگرم

پاکستان اور برطانیہ کے درمیان مجرموں کی واپسی سے متعلق کابینہ کمیٹی کے اجلاس کو وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر نے اجلاس کو بریفنگ دی۔

برطانیہ سے پاکستان میں مجرموں کی واپسی کے لیے وفاقی حکومت سرگرم ہوگئی۔ وزارت داخلہ نے نواز شریف سمیت دیگر ہائی پروفائل کیسز میں مطلوبہ لوگوں کی واپسی کے لیے برطانیہ سے مشاورت کا فیصلہ کیا ہے۔

پاکستان اور برطانیہ کے درمیان مجرموں کی حوالگی کے معاہدے سے متعلق خصوصی وزارتی کمیٹی کا اجلاس وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کی زیر صدارت ہوا۔

یہ بھی پڑھیے

ناظم جوکھیو قتل کیس میں نامکمل چالان پیش کرنے پر حلیم عادل شیخ برہم

82 سالہ شہری سے ایف بی آر کی زیادتی، معافی صدر عارف علوی نے مانگی

اجلاس میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، وزیر انسانی حقوق شیریں مزاری ، معاون خصوصی احتساب شہزاد اکبر اور دیگر حکام نے شرکت کی۔

پاکستان اور برطانیہ کے درمیان مجرموں کی واپسی سے متعلق کابینہ کمیٹی کے اجلاس کو وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر نے اجلاس کو بریفنگ دی۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ پاکستان اور برطانیہ کے درمیان معاہدے میں موجود حائل رکاوٹوں کو دور کرکے بات چیت کی جائے گی اور وفاقی کابینہ سے منظوری لی جائے گی۔

وزیر داخلہ شیخ رشید کی زیر صدارت میں ہونے والے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ نواز شریف سمیت ہائی پروفائل کیسز میں مطلوب لوگوں کی واپسی کے لیے برطانیہ سے مزید مشاورت کی جائے گی۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ برطانیہ کے ساتھ معاہدے کو بہترین مفاد عامہ میں مکمل کیا جائے گا۔ معاہدے سے دونوں ممالک خلاف ورزی پر اپنے شہریوں کی واپسی کا مطالبہ کرسکیں گے۔

فیصلہ کیا گیا کہ معاہدے کی توثیق سے عدالتوں سے سزایافتہ مجرموں کی واپسی ممکن ہوسکے گی۔

متعلقہ تحاریر