وزیراعظم نے دفتر چھوڑ کر سیاسی میدان کی کمان سنبھال لی

پی ٹی آئی کے ساڑھے تین سالہ دور اقتدار میں یہ دوسرا موقع ہے کہ عمران خان نے کابینہ میٹنگ منسوخ کرتے ہوئے کوئٹہ میں جلسہ عام سے خطاب کرنے کافیصلہ ہے۔

خیبر پختون خوا ، بلوچستان اور پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کے مراحل آنے سے قبل پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) پارلیمنٹرینر کی خواہش پر وزیراعظم عمران خان نے خود انتخابی مہم کی قیادت کرنے کا فیصلہ ہے، اس سے سلسلے میں آج عمران خان نے کابینہ اجلاس کو ملتوی کرتے ہوئے کوئٹہ میں جلسہ عام سے خطاب کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

کے پی کے میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں شکست کے بعد وزیراعظم عمران خان نے کسی بھی قسم کے سیاسی نقصان سے بچنے کےلیے اپنی تمام تر توجہ آنے والے بلدیاتی انتخابات پر مرکوز کردی ہے، اور اپنے اقتدار کے ساڑھے تین سالوں میں دوسری مرتبہ منگل کو ہونے والی ہفتہ وار کابینہ میٹنگ منسوخ کردی ہے۔

یہ بھی پڑھیے

ایم پی اے برہان چانڈیو کی گرفتاری کیلیے پولیس کی یقین دہانی، دھرنا ختم

راحیل شریف نے نوازشریف سے ایکسٹینشن مانگی تھی، عرفان صدیقی کا دعویٰ

وزیراعظم نے گذشتہ منگل یعنی (یکم فروری) کو کابینہ کا اجلاس ملتوی کرتے ہوئے بہاولپور کا دورہ کیا تھا جہاں انہوں نے بہاولپور کی عوام میں انصاف صحت کارڈز کی تقسیم کی۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت ترقیاتی بجٹ اور روزگار کے مواقع پیدا کررہی ہے تاکہ جنوبی پنجاب کے عوام کی محرومیوں کو دور کیا سکے۔

گذشتہ روز پاکستان تحریک انصاف کی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی (سی ای سی) کی میٹنگ کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر مملکت برائے اطلاعات فرخ حبیب کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے تمام اراکین کی خواہش کا احترام کرتے ہوئے عوام کی عدالت میں جانے کا فیصلہ کیا ہے۔

Farrukh Habib Press Conference
GOOGLE SOURCE

انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے پارٹی کو متحرک کرنے کے لیے ملک گیر عوامی رابطہ مہم شروع کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔ نچلی سطح پر حکومت کے اہم اقدامات کو اجاگر کرنے کے لیے رابطہ مہم شروع کی جائےگی۔

فرخ حبیب نے بتایا کہ منصوبے کے مطابق وزیراعظم عمران خان ، جو پی ٹی آئی کے چیئرمین بھی ہیں ، ملک کے طول و عرض میں منعقد کیے جانے والے بڑے عوامی اجتماعات سے خطاب کریں گے۔

انہوں نے بتایا کہ عمران خان اس سلسلے میں منگل کے روز کوئٹہ میں جلسہ عام سے خطاب کریں گے اور جبکہ 9 فروری کو فیصل آباد میں ایک پبلک میٹنگ سے خطاب کریں گے اور صحت انصاف کارڈ کا اجراء کیا جائے گا، جس میں ایک خاندان کو 10 لاکھ روپے تک کا مفت علاج فراہم کیا جائے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ آزاد جموں و کشمیر، خیبرپختونخوا، اسلام آباد، پنجاب اور گلگت بلتستان کے لوگ پہلے ہی مفت علاج کی سہولت سے استفادہ کر رہے ہیں۔

اجلاس کی دیگر تفصیلات بتاتے ہوئے وزیر مملکت فرخ حبیب کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کے تمام صوبائی صدور نے پارٹی کی تنظیم نو کے حوالے سے اپنی رپورٹیں پیش کیں اور پارٹی چیئرمین نے 15 فروری تک ضلعی سطح پر عمل مکمل کرنے کی ہدایت کی۔

فرخ حبیب کا کہنا تھا پارٹی چیئرمین نے اپنے مستقل پارلیمانی بورڈ کو صوبوں میں آئندہ بلدیاتی انتخابات سے متعلق معاملات کو یکجا کرنے اور اس کی مکمل رپورٹ پیش کرنے کا کہنا ہے۔

متعلقہ تحاریر