سینیٹر رحمان ملک اسلام آباد کے اسپتال میں انتقال کرگئے

سابق وفاقی وزیر کورونا کی وجہ سے شدید علیل تھے، پھیپھڑے خراب ہوچکے تھے، سابق صدر آصف علی زرداری کے قریب ترین ساتھیوں میں شمار ہوتا تھا۔

پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما، سابق وفاقی وزیر داخلہ اور سینیٹر رحمان ملک آج شب انتقال کر گئے، ان کی عمر 70 برس تھی اور وہ پچھلے کئی روز سے علیل تھے۔

سینیٹر رحمان ملک کورونا وائرس میں مبتلا تھے اور وینٹی لیٹر پر تھے، ترجمان کے مطابق وہ اسلام آباد کے اسپتال میں زیر علاج تھے جہاں ان کی وفات ہوگئی۔

یہ بھی پڑھیے

کورونا کیسز میں کمی ، حکومت نے نئی سفری سہولیات کی اجازت دے دی

اٹارنی جنرل کا نواز شریف کے میڈیکل ریکارڈ کے لیے ذاتی معالج ڈیوڈ لارس کو خط

ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ رحمان ملک کے پھیپھڑے کورونا وائرس کی وجہ سے خراب ہوگئے تھے۔

سابق وزیر کے گھر والوں نے کہا ہے کہ مرحوم کی نماز جنازہ اور تدفین کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔

سینیٹر رحمان ملک 2008 سے 2013 تک پیپلزپارٹی کے دور حکومت میں وفاقی وزیر داخلہ تھے، انہیں سابق صدر آصف علی زرداری کا اہم راز دان بھی سمجھا جاتا تھا۔

متعلقہ تحاریر