وزیراعظم عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد جمع کرادی گئی

قومی اسمبلی کے سیکریٹریٹ میں جمع کرائی گئی تحریک عدم اعتماد پر اپوزیشن کے 86 اراکین قومی اسمبلی کے دستخط ہیں۔

 حزب اختلاف کی جماعتوں نے پاکستان تحریک انصاف حکومت کے وزیراعظم عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد قومی اسمبلی میں جمع کرا دی ہے۔ تحریک عدم اعتماد پر ردعمل دیتے ہوئے وزیراعظم نے کہا ہے حکومت کہیں نہیں جارہی ، اپوزیشن کو بری طرح سے شکست سے دوچار کریں گے۔ 

قومی اسمبلی کے سیکریٹریٹ میں جمع کرائی گئی تحریک عدم اعتماد پر اپوزیشن کے 86 اراکین قومی اسمبلی کے دستخط ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

سپریم کورٹ کا مونال ریسٹورنٹ کو ڈی سیل کرنے کا حکم

جہانگیر ترین اور علیم خان نے اپنوں اور بے گانوں سب کو حیران کردیا

اپوزیشن اراکین اسمبلی نے قومی اسمبلی کا اجلاس بلانے کے لیے ریکوزیشن جمع کرا دی ہے۔

وزیراعظم عمران خان کے خلاف جمع کرائی گئی تحریک عدم اعتماد پر پاکستان مسلم لیگ ن ، پاکستان پیپلز پارٹی ، جمعیت علمائے اسلام (ف) اور عوامی نیشنل پارٹی کے ارکان کے دستخط ہیں۔

قوائد و ضوابط کے مطابق اسپیکر قومی اسمبلی کو تحریک عدم اعتماد جمع ہونے کے 3 تین بعد اور 7 دن سے پہلے قومی اسمبلی کا اجلاس  بلانے کے پابند ہوتے ہیں۔

تحریک عدم اعتماد جمع کرانے پر ردعمل دیتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ہم اپنی پوزیشن کا پوری طرح سے دفاع کریں گے۔ وزیراعظم عمران خان سے میری گفتگو ہوئی وہ پراعتمد ہیں۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے اپوزیشن اپنا زور لگا لے ہم اپنا دفاع کریں گے۔

اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کا کہنا ہے کہ وہ رولز اینڈ ریگولیشن کو دیکھیں گے پھر اسمبلی اجلاس بلانے کا فیصلہ کریں گے۔

متعلقہ تحاریر