جے10 سی لڑاکا طیاروں کا اسکواڈرن پاک فضائیہ میں شامل

وزیراعظم عمران خان، ایئر چیف مارشل ظہیر احمد بابر اور آرمی چیف جنرل قمر باجوہ کامرہ ایئربیس میں ہونیوالی تقریب میں شریک، عمران خان نے چین کا شکریہ ادا کیا۔

وزیراعظم عمران خان نے جدید لڑاکا طیاروں جے10 سی کی ملک کے دفاعی نظام میں شمولیت کو بڑی کامیابی قرار دیا، انہوں نے کہا کہ ان طیاروں سے خطے میں بڑھتے ہوئے سیکیورٹی عدم توازن کا تدارک ہوسکے گا۔

وزیراعظم نے آج کامرہ ایئربیس میں جے10 سی طیاروں کی پاک فضائیہ میں شمولیت کی تقریب سے خطاب کیا۔

انہوں نے یہ جدید طیارے 8 ماہ کی ریکارڈ مدت میں فراہم کرنے پر چین کا بھی شکریہ ادا کیا۔

عمران خان نے کہا کہ پوری قوم کو اپنی مسلح افواج کی دفاعی صلاحیتوں پر مکمل اعتماد ہے۔

انہوں نے بالاکوٹ حملے پر پاکستانی ردعمل یاد دلایا اور کہا کہ ہمارے ردعمل سے دنیا کو پیغام گیا کہ پاکستان اپنا دفاع کرنا جانتا ہے۔

وزیراعظم نے فضائیہ کی مستقبل کیلیے حکمت عملی کی تعریف کی۔ انہوں نے کہا کہ مستقبل کی جنگوں کے پیش نظر اب ٹیکنالوجی پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔

انہوں نے بتایا کہ ہم نے مقامی ٹیکنالوجی کے فروغ کیلیے ایک ٹیکنالوجی زون قائم کیا ہے اور پاکستان ایئرفورس کے تعاون سے ایک یونیورسٹی بھی قائم کی جائے گی جہاں نوجوانوں کو تمام جدید ٹیکنالوجیز سکھائی جاسکیں۔

اس موقع پر ایئر چیف مارشل ظہیر احمد بابر نے کہا کہ یہ ایک تاریخی لمحہ ہے کیونکہ تقریباً چار دہائیوں بعد پاک فضائیہ میں نئی جنریشن کے کامبیٹ سسٹم کو شامل کیا جارہا ہے جو کہ میں اسٹیٹ آف دی آرٹ ٹیکنالوجی اور اسلحہ سے لیس ہے۔

انہوں نے کہا کہ لڑاکا طیارے خودکار ہتھیاروں کے نظام کی وجہ سے طاقتور کامبیٹ سسٹم رکھتے ہیں۔

ایئرچیف نے کہا کہ لڑاکا طیاروں کی شمولیت معاصرانہ فضائی جنگ میں پاک فضائیہ کی صلاحیتوں میں اضافہ کرے گی۔

انہوں نے حکومت کی طرف سے تعاون پاک فضائیہ کو طیارے کے حصول میں معاونت فراہم کرنے پر شکریہ ادا کیا۔

ایئر چیف مارشل ظہیر بابر نے کہا کہ ہم ہتھیاروں کی دوڑ میں شامل نہیں ہونا چاہتے لیکن قومی سلامتی اور علاقائی استحکام کیلیے اپنی صلاحیتوں میں اضافہ کرتے رہیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ تقریب پاکستان اور چین کے درمیان مضبوط تعلقات کی مثال ہے۔

متعلقہ تحاریر