نئے آرمی چیف کی تعیناتی پر آئین اور قانون کے مطابق عمل کیا جائے، عمران خان

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کا کہنا ہے کہ ہماری کسی ادارے کے ساتھ کوئی لڑائی نہیں ، ہم چاہتے ہیں کہ ادارے مضبوط ہوں۔

نئے آرمی چیف کی تعیناتی کا معاملہ ، صدر مملکت عارف علوی کی زمان پارک میں چیئرمین تحریک انصاف سے ملاقات ، عمران خان نے کہا ہے کہ آئین اور قانون کے مطابق جو بنتا ہے سمری اس کے مطابق دیکھیں۔ دونوں رہنماؤں کی ملاقات کے تناظر میں فواد چوہدری نے کہا ہے کہ ساڑھے چھ یا سات بجے ایوان صدر سے سرکاری ہینڈ آؤٹ جاری کیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے عمران خان کی لاہور میں قائم رہائش گاہ زمان پارک میں ملاقات کی۔ ملاقات میں صدر مملکت نے نئے آرمی چیف کی تعیناتی کے حوالے سے وزیراعظم ہاؤس سے ملنے والی سمری پر بریفنگ دی۔

یہ بھی پڑھیے

وزارت داخلہ نے پی ٹی آئی کا لانگ مارچ رکوانے کے لیے مضحکہ خیز تھریٹ الرٹ جاری کردیا

وفاقی کابینہ نے لیفٹیننٹ جنرل حافظ عاصم منیر سید کو آرمی چیف تعینات کرنے کی منظوری دے دی

اس موقع پر عمران خان کا کہنا تھا ہم نے آئین اور قانون کی پاسداری کرنی ہے ، ہماری کسی ادارے سے کوئی جنگ نہیں ، اگر سمری درست ہے تو اس کو نکال دیں۔

عمران خان کا کہنا تھا ہم کسی کے خلاف کوئی بات نہیں کرنا چاہتے ، ہم چاہتے ہیں کہ ادارے مضبوط ہوں۔ اگر ادارے مضبوط ہوں گے تو ریاست مضبوط ہوگی۔

صدر علوی اور عمران خان کی ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما فواد چوہدری نے کہا ہے کہ ملاقات میں تمام پہلوؤں کا احاطہ کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ ملاقات 45 منٹ تک جاری رہی جس کے بعد صدر مملکت واپس اسلام آباد روانہ ہو گئے ہیں، اور ان شاء اللہ ساڑے چھ اور سات بجے کے درمیان ایوان صدر ایک آفیشل ہینڈ آؤٹ جاری کرے گا۔ ان شاء اللہ تمام معاملات آئین اور قانون کے مطابق حل کیے جائیں گے۔

متعلقہ تحاریر